site
stats
عالمی خبریں

ٹیکساس کی مسجد میں توڑ پھوڑ اور گند پھیلانے والوں کیخلاف تحقیقات کا آغاز

ٹیکساس:‌ پیرس واقعے کے بعدامریکی ریاست ٹیکساس میں مسجد میں توڑ پھوڑ اور گند پھیلانے والوں کیخلاف تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

پیرس حملوں کے بعدیورپی ممالک کی طرح امریکا میں بھی مسلمانوں کے خلاف نفرت پر مبنی واقعات میں اضافہ ہورہا ہے، ایسا ہی ایک واقعہ ٹیکساس کی ایک مسجد میں پیش آیا جب نامعلوم افراد نے رات کے وقت مسجد میں توڑ پھوڑ کی اور گند پھیلایا اور قرآن کے صفحے پھاڑ ڈالے۔

واقعے کے چند روز بعد ہی مسجد سے ملحقہ علاقوں کے رہائشیوں نے اسلامک سینٹر میں جمع ہو کر مسلم کمیونٹی کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔ ان افراد میں ایک سات سالہ بچہ جیک سوانسن بھی شامل تھا جس نے اپنے منی باکس میں جمع بیس ڈالرز کی رقم مسجد کو چندہ کی۔

بچے کی ماں لارا کا کہنا تھا کہ ہم مسلمان نہیں لیکن ایسے واقعات کیخلاف ہیں اور مسلمانوں کے ساتھ ہیں. واقعے کے بعد صفائی اورمرمت کے بعد مسجد کو عبادت کیلئے کھول دیا گیا ہے ۔ منتظمین کے مطابق انہیں علاقے کے لوگوں کی بھرپور حمایت حاصل ہے، جبکہ پولیس واقعے میں ملوث افراد کے خلاف تحقیقات کر رہی ہے.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top