The news is by your side.

Advertisement

تھائی لینڈ: غار میں پھنسے ننھے فٹبالرز کو بچانے والا غوطہ خور ہلاک

بینکاک: تھائی لینڈ کے غار میں پھنسے ہوئے 12 لڑکوں اور کوچ کو بچانے کے لیے جانے والا تھائی لینڈ کی بحریہ کا ایک سابق غوظہ خور ہلاک ہوگیا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ 38 سالہ سمن کونان لاپتہ گروپ کو سامان فراہم کرنے کے بعد تھیم لانگ غار کمپلیکس سے باہر نکل رہے تھے کہ آکسیجن کی کمی سے بیہوش ہوگئے تھے تاہم ان کے ساتھی انہیں بچانے میں ناکام رہے۔

سمن کونان کے بارے میں بتایہ جارہا ہے کہ وہ بہترین ایتھلیٹ اور سائیکلسٹ تھے اور وہ تھیم لانگ غار کمپلیکس میں لاپتہ ہونے والے 12 بچوں کے لیے دو ہفتے قبل شروع کیے جانے والے ریسیکیو آپریشن کا حصہ تھے۔

مذکوہ غوطہ خور نے کچھ عرصہ قبل تھائی لینڈ نیوی کی نوکری چھوڑ دی تھی، تاہم وہ غار میں پھنسے ہوئے 12 بچوں کے گروپ کو بچانے کے لیے کیے جانے والے آپریشن میں مدد فراہم کرنے کے لیے واپس آگئے تھے۔

مزید پڑھیں: تھائی لینڈ کے غاروں میں لاپتہ جونیئر فٹبال ٹیم کا 9 دن بعد معجزاتی طور پر سراغ مل گیا

ڈپٹی گورنر پاساکور بوونیا لک چانگ رائے نے ریسیکیو سائٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایک سابق رضاکار جس نے ریسکیو آپریشن کے لیے مدد کی پیشکش کی تھی گزشتہ رات دو بجے کے قریب زندگی کی بازی ہار گیا۔

تھائی لینڈ کے غار میں پھنسے ہوئے بچوں کو بچانے کے لیے ریسکیو آپریشن میں ایک ہزار کے قریب افراد حصہ لے رہے ہیں، اس آپریشن میں نیوی کے غوطہ خور، فوجی اہلکار اور سویلین رضاکار شامل ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں