The news is by your side.

Advertisement

‘قرنطینہ فری سفر’ جنوب مشرقی ایشیائی ملک کا اہم اعلان

بنکاک: عالمی سطح پر کرونا کیسز میں کمی کے بعد مختلف ممالک کی جانب سے کرونا پابندیوں پر نرمی کی جارہی ہے ایسے میں تھائی لینڈ نے بھی اہم اعلان کردیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق تھائی لینڈ نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ یکم نومبر سے ویکسین شدہ سیاحوں کے لئے اپنی سرحدیں کھول دے گا، تھائی وزیراعظم پریوت چن اوچا کی جانب سے کئے گئے رات کہا گیا کہ کہ ملک ” کم خطرے والے ممالک ” سے ہوائی سفر کرنے والے سیاحوں کے لئے اپنی سرحدیں کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تھائی وزیراعظم نے ٹیلی ویژن خطاب میں کہا کہ سیاح جب تھائی لینڈ پہنچیں گے تو انہیں منفی کووڈ ٹیسٹ کی رپورٹ دکھانا ہوگی، منفی ٹیسٹ کے بعد وہ ملک بھر میں آزادانہ سفرکرسکتے ہیں۔

اس اعلان کے ساتھ ہی مکمل ویکسی نیشن کرانے والے سیاحوں کے لئے موجودہ پابندیوں نمایاں طور پر نرم ہوگئی ہے ، اس س قبل تھائی لینڈ داخل ہونے والے افراد کو کم از کم سات دن قرنطینہ سے گزرنا ہوتا تھا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق کم خطرہ سمجھے جانے والے دس ممالک میں برطانیہ، امریکا، چین اور جرمنی بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ عالمی وبا وبائی کرونا سے پہلے تھائی لینڈ سالانہ 40 ملین سیاحوں کو اپنے دلکش ساحلوں اور مضبوط نائٹ لائف کی طرف راغب کرنا تھا، تھائی لینڈ سیاحت کو اپنی قومی آمدنی کا 20 فیصد بھی بتاتی ہے۔

لیکن کووڈ سے متعلق سفری پابندیوں نے معیشت کو خراب کردیا ہے جو بیس سالوں میں اس کی بدترین کارکردگی ہے

وبائی امراض سے پہلے، تھائی لینڈ سالانہ 40 ملین سیاحوں کو اپنے دلکش ساحلوں اور مضبوط نائٹ لائف کی طرف راغب کرنا تھا، تھائی لینڈ سیاحت کو اپنی قومی آمدنی کا 20 فیصد بتاتی ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال تھائی لینڈ نے سیاحت کے شعبے میں ہونی وال آمدنی میں 50 ارب ڈالر کا نقصان کیا تھا کیونکہ ملک میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد 6.7 ملین رہ گئی تھی جو دو سال قبل 39.9 ملین ریکارڈ تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں