site
stats
سندھ

تھرکول پاور پروجیکٹ وقت سے قبل مکمل ہونے کا امکان

کراچی: تھر میں لگایا جانے والا 660 میگا واٹ کا کول پاور پراجیکٹ مقررہ وقت سے قبل مکمل ہو جائے گا، پروجیکٹ کے لیے ہونے والی کان کنی 40 فیصد اور پاور پروجیکٹ پر 33 فیصد کام مکمل ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے تھر میں کوئلے سے بجلی بنانے کا منصوبہ شروع کیا گیا ہے جس کے تحت تھر سے کان کنی کے ذریعے کوئلہ نکال کر وہی آدھا کلومیٹر دور 660 میگاواٹ بجلی بنانے کا پاور پلانٹ لگایا جارہا ہے۔

کوئلے سے وہیں بجلی بنا کر نیشنل گرڈ میں شامل کی جائے گی جس سے ملک بھر میں بجلی کی قلت میں مزید کمی واقع ہوگی۔

یہ پروجیکٹ اپنی مدت سے کم میں مکمل ہوجائے گا  15 ماہ کے دوران کان کنی کا کام 40 فیصد اور توانائی کے منصوبے پر 33 فیصد تک کام مکمل کر لیا گیاہے۔

اس ضمن میں سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی کے سربراہ شمس الدین شیخ نے کہا ہے کہ تھر بلاک II میں کوئلے کی کان کنی اور 660 میگا واٹ توانائی کا منصوبہ مقررہ وقت سے قبل ہی تین جون 2019 سے کام شروع کردے گا۔

انہوں نے بتایا کہ اس منصوبے کی تکمیل کے لیے 42 ماہ کا تخمینہ لگایا گیا تھا لیکن کام تیز رفتاری سے کرتے ہوئے 38 ماہ میں مکمل کر لیں گے۔

شمس الدین شیخ نے کہا کہ کوئلے کے منصوبوں سے سب سے پہلے فائدہ ملک کے بقیہ علاقوں کی نسبت تھر کے مقامی افراد کو پہنچنا چاہیے اور ہماری کمپنی نے اس علاقے کے عوام کی تعلیم، صحت، ذریعہ معاش اور پینے کے پانی کے لیے اہم اقدامات کیے ہیں اور ان اسکیموں سے مقامی افراد کو فائدہ پہنچنا شروع ہو گیا ہے۔

ضلع تھرپارکر سے رکن سندھ اسمبلی ڈاکٹر مہیش ملانی نے کہا کہ تھر کول بلاک II منصوبہ پاکستان میں توانائی کے بڑے منصوبوں میں سے ایک ہے اور یہ تھر کے باسیوں کے لیے ایک نعمت ہے۔

ڈاکٹر مہیش ملانی نے یقین دہانی کرائی کہ سندھ حکومت گورانو میں رہنے والوں کو پیکیج دینے پر غور کر رہی ہے جس کا جلد اعلان کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ بعض عناصر کی جانب سے پھیلائی گئی افواہوں اور غلط معلومات کے برعکس یہ منصوبہ تھر اور تھر کے عوام کو بڑے پیمانے پر فائدہ پہنچائے گا جس سے علاقے کا تشخص مکمل طور پر بدل جائے گا اور یہ غربت زدہ کے بجائے ایک خوشحال علاقہ بن جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top