The news is by your side.

Advertisement

نگراں وزیر اعلیٰ سندھ کی حلف برداری کے بعد بیوروکریسی میں بڑی تبدیلیاں متوقع

کراچی: سندھ کے نامزد نگراں وزیر اعلیٰ فضل الرحمان کی حلف برداری کے بعد بیوروکریسی میں بڑی تبدیلیاں متوقع ہیں۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علیٰ شاہ اور اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کی ملاقات ہوئی تھی جس میں سندھ کے نگراں وزیر اعلیٰ کے لیے سابق چیف سیکریٹری فضل الرحمان کے نام کا اعلان کیا گیا تھا جو کل اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نگران وزیراعلیٰ کے حلف کے بعد بیوروکریسی میں بڑی تبدیلیاں ہوں گی، 48 گھنٹے میں مختلف محکموں کے افسران کے تبادلے اور تقرریاں بھی ہوں گی۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ نگراں وزیراعلیٰ ایماندار اور اچھی شہرت والے بیوروکریٹس کی ٹیم لے کر چلیں گے، اچھی شہرت والے افسران کو ترجیحی بنیادوں پر ذمہ داریاں دی جائیں گی۔


نگراں وزیر اعلیٰ سندھ کے لیے فضل الرحمان کے نام کا اعلان


ذرائع کا یہ بھی کہنا تھا کہ اپنے فرائض کی انجام دہی کے دوران غفلت کے مرتکب افسران کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی ہوگی، جبکہ نگراں وزیراعلیٰ کابینہ کے پہلے ہی اجلاس میں لائحہ عمل واضح کریں گے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز نگراں وزیر اعلیٰ سندھ کے لیے فضل الرحمان کا نام فائنل کیا گیا ہے، نامزد نگراں وزیر اعلیٰ 2007 سے 2010 تک چیف سیکریٹری رہے، نگراں وزیراعلیٰ کے لیے فضل الرحمان کا نام اپوزیشن جماعتوں نے دیا تھا۔

واضح رہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علیٰ شاہ اور اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے نگراں وزیر اعلیٰ سندھ کے نام کا اعلان کیا تھا، اس موقع پر مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ایسا نام لانا چاہتے تھے جس پر تمام پارٹیوں کو اتفاق ہو، فضل الرحمان کو نگراں حکومت میں کام اور الیکشن کرانے کا تجربہ ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں