The news is by your side.

Advertisement

کیپٹن (ر) صفدر کی درخواست پر عدالت نے فیصلہ سنا دیا

لاہور کی سیشن عدالت نے کیپٹن (ر) صفدر کی نیب سمیت دیگر کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر پولیس کو قانون کے مطابق کارروائی کا حکم دے دیا۔

ایڈیشنل سیشن جج اعجز احمد گوندل نے کیپٹن (ر) صفدر کی وزیر اعظم عمران خان اور چیئرمین نیب سمیت دیگر کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت نے پولیس کو حکم دیا کہ درخواست گزار کو سن کر قانون کے مطابق کاررواٸی کی جاٸے۔

کیپٹن صفدر کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ حکومت اداروں کو استعمال کر رہی ہے، پراسیکیوشن ٹیم بھی بناٸی گٸی، اس کیس میں حکومت کی اتنی توجہ ہے کہ ایس پی خود عدالت میں پہنچے ہیں۔

فرہاد علی شاہ نے اپنے دلائل میں مزید کہا کہ پولیس کی طرف سے پیش کی گٸی رپورٹ بھی جھوٹی ہے۔ بلٹ پروف گاڑی کا شیشہ پتھر سے نہیں ٹوٹ سکتا، مریم نواز پر حملہ کیا گیا۔ پولیس آرڈر کے مطابق پولیس کی انویسٹی گیشن اور آپریشن ونگ علیحدہ ہے۔ ایس ایچ او کو کیسے پتا چل گیا کہ یہ درخواست غلط ہے۔

سرکاری وکیل نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزار نے جو درخواست مقدمہ کے لیے دی اس پر دستخط جعلی ہے۔ عدالت نے قرار دیا کہ اگر دستخط جعلی ہیں تو آپ عدالت میں درخواست دے دیں۔

سرکاری وکیل نے کہا کہ نیب نے ان کو طلب کیا کہ جواب دیں لیکن یہ دھاوا بولنے چلے گئے، انکی گاڑیوں سے پتھر برآمد ہوئے۔ جس سے ثابت ہوتا ہے کہ ان کا ارادہ حملہ کرنے کا تھا لہذا درحواست مسترد کی جاٸے ۔

Comments

یہ بھی پڑھیں