The news is by your side.

بابراعظم اپنے ’میچ ونر‘ کا استعمال ہی نہ کر سکے

محمد نواز کو میچ ونر قرار دینے والے کپتان بابراعظم اپنے آل راؤنڈر کا استعمال ہی نہ کر سکے۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے ابتدائی میچ میں شکست کے بعد بابراعظم نے آل راؤنڈر محمد نواز پر بھرپور اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کی حوصلہ افزائی کی اور انہیں میچ ونر قرار دیا جب کہ پوری ٹیم نے تالیاں بجا کر داد دی تھی۔

لیکن محمد نواز کا عالمی ایونٹ میں سفر عدم اعتماد اور غیریقینی کی صورتحال سے دوچار رہا۔ کپتان نے ان پر بطور بولر بھروسہ نہ کیا اور پورے ٹورنامنٹ میں صرف 9 اوورز ہی کروائے۔

ایونٹ کے تمام سات میچز کھیلنے والے محمد نواز سے فائنل سمیت تین میچوں میں بولنگ ہی نہیں کروائی گئی جب کہ سوائے بھارت کے انہوں نے کسی ٹیم کے خلاف 4 اوورز کا کوٹہ پورا نہیں کیا۔

’تو میرا میچ ونر ہے‘ نواز کیلیے پوری ٹیم نے تالیاں بجا دیں

محمد نواز کی بولنگ کو لے کر کپتان اس قدر تذبذب کا شکار رہے کہ فائنل جیسے اہم میچ میں شاہین آفریدی کا بقیہ اوور بھی پارٹ ٹائم افتخار احمد سے کروایا۔

بابراعظم نے انگلینڈ، زمبابوے اور بنگلادیش کے خلاف محمد نواز کو نہیں آزمایا جب کہ نیدرلینڈز کے خلاف 2، جنوبی افریقا کے خلاف ایک اور نیوزی لینڈ کے خلاف 2 اوورز پر اکتفا کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں