آخری ملاقات میں والدہ کی آنکھ سے ٹپکا آنسو آج بھی تکلیف دیتا ہے، آصف علی زرداری -
The news is by your side.

Advertisement

آخری ملاقات میں والدہ کی آنکھ سے ٹپکا آنسو آج بھی تکلیف دیتا ہے، آصف علی زرداری

لاہور: جاتی امرا میں میاں نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی تعزیت کے لیے آنے والے پی پی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے سابق وزیرِ اعظم کو بتایا کہ جب ان کی والدہ کے ساتھ آخری ملاقات ہوئی تب والدہ کی آنکھ سے  آنسو ٹپکا جو انھیں آج بھی تکلیف دیتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدرِ پاکستان آصف زرداری نے اپنے بیٹے اور پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ساتھ پیرول پر رہا نواز شریف کی اہلیہ کے انتقال پر تعزیت کی۔

عملی طور پر قیدِ تنہائی میں ہوں، بیرک کے ساتھ والے تمام کمرے خالی رہتے ہیں: نواز شریف

اس دوران آصف علی زرداری نے بھی جیل میں اپنی قید کے دوران کی یادیں سنائیں، انھوں نے کہا ’میں جیل میں تھا تو والدہ بیمار تھیں، پیرول مل رہا تھا لیکن میں نے نہیں لیا۔‘

آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ بعد میں جب ان کی بہن فریال تالپور نے اصرار کیا تو انھوں نے پیرول لیا اور والدہ کے پاس اسپتال پہنچے۔


یہ بھی پڑھیں:  بلاول اور زرداری کی نوازشریف سے ملاقات، بیگم کلثوم نواز کے انتقال پر تعزیت


سابق صدر نے نواز شریف کو بتایا کہ پیرول پر رہائی کے بعد جب وہ جیل سے اسپتال پہنچے تو والدہ کی طبیعت بہت بگڑ چکی تھی، یہ ان سے ہونے والی آخری ملاقات تھی۔ اس وقت ان کی آنکھ سے آنسو ٹپکا، یہ آنسو آج بھی تکلیف دیتا ہے۔

بہن کے اصرار پر پیرول لیا تھا: آصف زرداری

قید کاٹنے والے سابق وزیرِ اعظم نواز شریف نے آصف زرداری کو بتایا ’میں عملی طور پر قیدِ تنہائی میں ہوں، میری بیرک کے ساتھ والے تمام کمرے خالی رہتے ہیں۔‘

نواز شریف نے آصف زرداری سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قید کے دوران بیٹی مریم سے بھی ہفتے میں صرف ایک بار ہی ملتا ہوں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں