The news is by your side.

Advertisement

سرحدی قوانین کی خلاف ورزی پراٹلی نےفرانس سےجواب طلب کرلیا

روم : اطالوی حکومت نے فرانسیسی پولیس کی جانب سے اٹلی کے سرحدی علاقے ’بارڈونیکا‘ کے ایک طبی مرکز میں بلا اجازت داخل ہونے پر شدید احتجاج کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اٹلی کے سرحدی علاقے بارڈونیکا کے ریلوے اسٹیشن پر واقع کلینک کو اٹلی کے ایلپس پہاڑی سلسلے سے گزرنے والے تارکین وطن کو فوری طبی امداد فراہم کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

غیر سرکاری تنظیم ’رینبو فار افریقہ‘  کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کلینک میں دو روز قبل فرانسیسی پولیس اہلکار نائیجریا سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو ٹیسٹ کے لیے تھے۔ زیر حراست شخص پر منشیات اسمگلنگ کا شبہ تھا۔

فرانسیسی پولیس کی جانب سے اٹلی کے سرحدی قوانین کی خلاف ورزی پر اطالوی سیاست دانوں کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔ انھوں نے فرانس پر اٹلی کی تضحیک کا الزام عائد کیا اور کہا کہ اٹلی کا یہ نام نہاد یورپی دوست اس کے قانون کو خاطر میں لانے کے لیے تیار نہیں۔

واقعے پر اطالوی وزارت خارجہ نے فرانسیسی سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج کیا اور واقعے کی وضاحت طلب کی ہے، رومی حکومت نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ فرانسیسی پولیس کے  اہلکاروں کا یہ رویہ ہر گز قابل قبول نہیں۔

اطالوی وزرات داخلہ کا کہنا تھا کہ فرانسیسی پولیس کو پہلے آگاہ کیا گیا تھا کہ بارڈونیکا کے ریلوے اسٹیشن تک رسائی دینا ممکن نہیں، کیوں کہ وہ جگہ امدادی کاموں کے لیے استمال کی جاتی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں