The news is by your side.

Advertisement

یورپ میں کورونا وائرس کی دوسری لہر سراٹھانے لگی

برسلز : یورپ میں جان لیوا کرونا وائرس کی نئی لہز سر اٹھانے لگی، ٹیڈ روس نے کہا کہ کرونا وائرس کی ویکسین بن بھی گئی تو اگلے سال سے پہلے دستیاب نہیں ہوگی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق مہلک ترین کرونا وائرس کی وبا نے دنیا بھر کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے، یورپی ممالک میں سخت لاک ڈاون کے بعد نرمی کی گئی تو کرونا وائرس کیسز میں دوبارہ اضافہ ہونے لگا۔

عالمی ادارہ صحت نے یورپ میں کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز پر خبردار کیا ہے، عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ یورپ میں لاک ڈاون میں نرمی کے بعد نئے کیسز میں اضافہ ہورہا ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کا کہنا ہے کہ دنیا بھر میں وائرس کی صورتحال خراب سے خراب تر ہوتی جارہی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق عالمی ادارہ صحت کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈ روس نے یورپ میں کورونا وائرس کی دوسری لہر سراٹھانے پر کہا ہے کہ کورونا وائرس کی ویکسین بن بھی گئی تو اگلے سال سے پہلے دستیاب نہیں ہوگی۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 98 لاکھ 8 ہزار 276 ہوگئی ہے جبکہ ان میں سے 4 لاکھ 93 ہزار 996 کرونا مریض دم توڑ چکے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں