The news is by your side.

Advertisement

’’مغربی ایشیا میں امریکا کے داغدار وجود کے خاتمے کا وقت آن پہنچا ہے‘‘

تہران: ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے ایک بار پھر امریکا کو خبردار کردیا اور ٹرمپ کے سامنے کئی سوالات رکھ دیے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے ٹرمپ سے سوال کیا کہ کیا آپ نے کبھی انسانوں کا ایسا سمندر دیکھا ہے؟ یہ سوال ایرانی جنرل کی نماز جنازہ کے دوران عوامی ہجول کے نتاظر میں کیا گیا۔

جواد ظریف نے پوچھا کہ آپ اب بھی خطے سے متعلق مسخروں کے مشوروں پر کان دھریں گے؟ آپ کو اب بھی شبہ ہے ایک عظیم قوم کے مقاصد کو پامال کرپائیں گے؟

انہوں نے متنبہ کیا کہ مغربی ایشیا میں امریکا کے داغدار وجود کے خاتمے کا وقت آن پہنچا ہے۔

خیال رہے کہ 5 جنوری کو کیے گئے ٹوئٹ میں ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا تھا کہ امریکا شور مچائے یا چیخے چلائے، اس کا مغربی ایشیا میں اختتام کا آغاز ہوگیا ہے، امریکی حملہ عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے، امریکی صدد ھمکیاں دے کر پھر عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرنا چاہتے ہیں۔

قبل ازیں ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے اس امر کا کھل کر اشارہ دے دیا کہ ایران اپنے جنرل کی موت کا جواب ضرور دے گا۔ انہوں نے کہا تھا کہ ایران اپنے منتخب کردہ وقت پر جواب دینے کا حق رکھتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا نے حملہ کر کے 3 بڑی غلطیاں کی ہیں، ایک تو امریکا نے عراق کی خود مختاری اور دوم عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی، سوم امریکا نے خطے کے عوام کے جذبات کو شدید ٹھیس پہنچائی۔ ایران امریکا کی مذموم مہم اور بلیک میلنگ میں ملوث نہیں ہوگا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں