The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں مزید پاکستانی قیدی رہا

سعودی عرب میں قید 49 پاکستانیوں کو رہائی مل گئی۔

سعودی عرب میں تعینات پاکستانی سفیر بلال اکبر نے بتایا کہ 49 پاکستانی قیدیوں کو رہا کر دیا ‏گیا پاکستانی فلاحی کام کرنے والی شخصیات نے قیدیوں کے ہرجانے ادا کیے جس کے بعد رہائی ‏عمل میں آئی۔

انہوں نے کہا کہ رمضان سے اب تک 49 قیدی رہا ہوئے ہیں اور مزید 53 کیسز حل ہونا باقی ہیں۔

بلال اکبر نے قیدیوں کے ہرجانے ادا کرنے والی فلاحی تنظیموں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ‏‏‘حق خاص’ کے 4 مزید کیسز کو حل کر لیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ وزارتِ داخلہ نے وزیراعظم عمران خان کے کامیاب دورے کے بعد سعودی ‏عرب سے وطن واپس پہنچنے والی قیدیوں کی تفصیلات جاری کی تھیں۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری ہونے والی تفصیلات میں بتایا گیا تھا کہ سعودی عرب سے 1100 ‏قیدیوں کو پاکستان منتقل کیا گیا، اب انہیں پاکستانی جیلوں میں منتقل کیا جائے گا۔

وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ ’منشیات میں ملوث 22 اور قتل میں ملوث 8 قیدیوں ‏کوسعودی عرب سے وطن واپس نہیں لایا جاسکا‘۔
انہوں نے کہا کہ ’وزیر اعظم سے ایک ارب روپے فنڈز کی درخواست کی ہے، اگر یہ رقم مل گئی تو ‏معمولی جرائم میں ملوث 2005سے سعودی جیلوں‌ میں‌ قید سیکڑوں پاکستانی قیدیوں کے جرمانے ‏ادا کیے جائیں گے، جس سے انہیں رہائی مل سکتی ہے‘۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کے دورۂ پاکستان سے قبل سعودی عرب میں تعینات ہونے ‏والے پاکستانی سفیر بلال اکبر نے بتایا تھا کہ عمران خان کے دورے کے دوران سعودی جیلوں میں ‏قید پاکستانی قیدیوں کی رہائی اور پاکستان منتقلی کا معاملہ اٹھایا جائے گا، امید ہے سیکڑوں قیدی ‏عید سے قبل وطن واپس پہنچ جائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں