The news is by your side.

Advertisement

حج کے لیے جاتے ہوئے کون سی اشیا ساتھ لے جائیں؟

کرونا وبا کی وجہ سے 2 سال کے تعطل کے بعد بالآخر حج کی رونقیں بحال ہوگئیں، اب تک 7 ہزار سے زائد حجاج سعودی عرب پہنچ چکے ہیں۔

حجاج کی سعودی عرب روانگی سے قبل پاکستان کے مختلف شہروں میں قائم حاجی کیمپس میں زائرین کو تربیت دی جا رہی ہے جس میں حج کے فرائض کی ادائیگیوں، سفر کے دوران ضروری اقدامات اور تمام اشیا کی فہرست بھی فراہم کی گئی ہے۔

حج ڈائریکٹوریٹ اسلام آباد کے ڈائریکٹر حسیب احمد صدیقی کا کہنا ہے کہ حاجی کیمپ میں حجاج کو تربیت دینے کے ساتھ ساتھ یہ بھی بتایا جاتا ہے کہ کون سی اشیا ساتھ لے کر جانی چاہئیں۔

حسیب احمد کے مطابق سفر حج کے دوران کم سے کم سامان ساتھ لے کر جانا چاہیئے جو باآسانی ساتھ رکھا جاسکے، بالخصوص زائد عمر کے حجاج جتنا کم سامان ساتھ لے کر جائیں گے اتنی ہی آسانی ہوگی کیونکہ وہاں عام رہائش کی طرح رہائش نہیں ہوتی اور جگہ کی بھی کمی ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حجاج سفری دستاویزات کے لیے اپنے ساتھ ایک چھوٹا بیگ رکھیں، اس کے علاوہ احرام کے دو جوڑے بھی رکھیں اور ویسے پہننے کے لیے کپڑوں کے چار جوڑے ساتھ لے کر جائیں۔

حسیب احمد کا کہنا ہے کہ ایسا بیگ ساتھ رکھیں جو زیادہ بڑا بھی نہ ہو اور جس میں سارا سامان بھی پورا آجائے، اس کے علاوہ چھتری، جوتے اور پانی کی بوتل ساتھ لازمی رکھیں تاکہ ڈی ہائیڈریشن کا شکار نہ ہوں۔

انہوں نے بتایا کہ حج سے متعلق تربیت کے دوران ضروری اشیا کے حوالے سے باقاعدہ بریفنگ کے ساتھ ایک کتابچہ بھی فراہم کیا جاتا ہے جس میں ضروری اشیا کی ایک فہرست دی جاتی ہے تاکہ حجاج کو کسی قسم کے مسائل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں