The news is by your side.

Advertisement

خواتین کو جنسی حملوں سے بچانے والا نیکلس

نئی دہلی: بھارت میں خواتین کے خلاف بڑھتے ہوئے جنسی جرائم کو دیکھتے ہوئے ان کے لیے ایک اور حفاظتی ہتھیار متعارف کروا دیا گیا جو بظاہر دیکھنے میں ایک زیور ہے۔

بھارت میں چھوٹے پیمانے پر کام کرنے والی ایک کمپنی نے گلے میں پہننے والا ایسا نیکلس تیار کیا ہے جو کسی خطرے کی صورت میں خواتین کو بچا سکتا ہے۔

خواتین کے روزمرہ استعمال کا یہ زیور جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہے جو ایک ایپلی کیشن کے ذریعے موبائل فون سے منسلک ہوسکتا ہے۔

جب بھی خواتین خود کو کسی مشکل میں پائیں گی تو اس نیکلس کو چھونے اور دبانے کی صورت میں ایک الرٹ اس شخص کو چلا جائے گا جس کا نمبر پہلے سے ایپ میں محفوظ کیا جا چکا ہوگا۔

نیکلس کی ایپ میں 3 نمبرز محفوظ کیے جاسکتے ہیں۔ خطرے کی صورت میں ان افراد کو فوری طور پر ایک پیغام پہنچے گا جس سے انہیں اندازہ ہوگا کہ نیکلس پہننے والا کسی مشکل میں ہے۔

مزید پڑھیں: جنسی حملوں سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر

اس نیکلس کو دو بار دبانے پر ایک زوردار الارم بھی بج اٹھے گا جس سے آس پاس کے لوگ متوجہ ہوجائیں گے۔

نیکلس میں نصب ڈیوائس چارجنگ بیٹری سے کام کرتی ہے جو ایک بار چارج کرنے کے بعد 3 سے 4 دن تک کام کرسکے گی۔

خواتین کو بچانے والے اس نیکلس کی قیمت ڈھائی ہزار بھارتی روپے سے شروع ہوتی ہے۔

یاد رہے کہ بھارتی کرائم ریکارڈ بیورو کے مطابق بھارت میں اس وقت خواتین سے زیادتی چوتھا بڑا اور عام جرم بن چکا ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق سنہ 2013 میں لگ بھگ 25 ہزار خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

ہر سال پیش آنے والے زیادتی کے واقعات میں سے صرف 5 سے 6 فیصد ایسے ہیں جو رپورٹ ہو پاتے ہیں۔ ان میں بھی ملزمان آزاد ہوجاتے ہیں اور زیادتی کا شکار متاثرہ لڑکی اور اس کا خاندان انصاف کے حصول میں بری طرح ناکام رہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں