The news is by your side.

Advertisement

لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر جرمانہ وقید کی سزا

کراچی: محکمہ داخلہ سندھ نے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا، سرکاری احکامات کی خلاف ورزی قابل سزا جرم ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ میں لاک ڈاؤن سے متعلق محکمہ داخلہ سندھ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا جس میں کہا گیا ہے کہ اندرون وبیرون شہر لوگوں کی نقل وحرکت پر پابندی عائد ہوگی۔محکمہ داخلہ سندھ نے وبائی امراض ایکٹ کے تحت 15 دن کے لیے پابندیاں عائد کی ہیں۔

شہریوں کے لیے ہر طرح کا سفر، جمع ہونا ممنوع قرار

نماز جنازہ کا اجتماع بھی محدود کر دیاگیا، نماز جنازہ میں صرف قریبی رشتے دار شریک ہوسکیں گے۔

نماز جنازہ کے لیے متعلقہ ایس ایچ او سے پیشگی اجازت لینا ہوگی، نماز جنازہ کے اجتماع میں بھی ہر فرد فاصلہ رکھے گا۔

لاک ڈاؤن میں اسپتالز، لیبارٹریز، میڈیکل اسٹورز سے منسلک افراد پابندیوں سے مستثنیٰ ہوں گے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ضروری خدمات اور دفاتر کے افراد پر بھی پابندی نہیں ہوگی۔

مریض کے ساتھ ایک تیماردار کے جانے کی بھی اجازت ہوگی، اشیائے ضروریہ ،ادویات خریدنے کے لیے جانے والے کو اجازت ہوگی۔

پورٹ پر کام کرنے والے ملازمین کو لاک ڈاؤن سے استثنیٰ ہوگا، میڈیا نمائندگان، سماجی رضا کاروں کو لاک ڈاؤن سے استثنیٰ ہوگا۔

پولیس و دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کو خصوصی اختیارات تفویض کیے گئے ہیں۔

سرکاری احکامات کی خلاف ورزی قابل سزاجرم ہوگا، قانون نافذ کرنے والے اداروں کے متعلقہ افسر احکامات کی خلاف ورزی پر سزا دیں گے،سندھ وبائی امراض ایکٹ کے تحت لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر جرمانہ وقید ہوگی۔

سندھ میں 15 روز کیلئے لاک ڈاؤن کا اعلان، وزیراعلیٰ نے ہدایات جاری کردیں

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے صوبے بھر میں رات 12 بجے سے لاک ڈاؤن کا اعلان کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب عوام کو محتاط ہو کر گھروں میں بیٹھنا ہے، یہ کرفیو نہیں (کیئر فار یو) ہے اور اس دوران لوگوں کو بلا ضرورت گھر سے نکلنے کی اجازت نہیں ہوگی، اگر کسی کام سے نکلیں تو شناختی کارڈ ساتھ رکھیں۔

واضح رہے کہ کرونا وائرس کے پیش نظر  کراچی اور اندرون سندھ میں رینجرز کی اضافی نفری تعینات کر دی گئی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں