نرسنگ ہاؤس میں سو سے زائد عمر والی تین خواتین کا جشن صد سال منایا گیا nursing-home
The news is by your side.

Advertisement

نرسنگ ہاؤس میں سو سے زائد عمر والی تین خواتین کا جشنِ صد سال

برکلن : نیویارک کے نرسنگ ہاؤس میں موجود سو سال سے زائد عمر رکھنے والی تین خواتین کا جشنِ صد سال منایا گیا جس میں سینٹر کو سجایا گیا اور کیک کاٹا گیا۔

نیویارک میں قائم نر سنگ ہاؤس میں 6 مارچ کو عام دنوں کی نسبت نہ صرف گہما گہمی زیادہ رہی بلکہ آج سینٹر کے در و دیوار کو پھولوں، برقی قمقموں اور تہنیتی کارڈز سے سجایا گیا ہے جب کہ ہلکی ہلکی مدھر سی موسیقی بھی سے حاضرین لطف و اندوز ہوتے رہے۔

اس پورے اہتمام کا مقصد نرسنگ ہاؤس میں موجود تین سو سالہ خواتین کا جشن صد سالہ منانا تھا جہاں ان تینوں سو سالہ خواتین نے جشن صد سالہ کا کیک کاٹا اور اپنی طویل عمری کے راز سے آگاہ کیا۔


لوسیلی پرائس 100 ، صوفیہ اسمتھ 101 جب کہ گریس میری زندگی کی 102 بہاریں دیکھ چکی ہیں اور انہی خواتین کے اعزاز مین یہ تقریب منعقد کی گئی ہے جس کے دوران تینوں معمر ترین خواتین خوش دکھائی دے رہے ہیں تاہم ان کی آنکھوں میں اپنوں کی کمی اور ان کا ناروا سلوک آنسو بن کے چھلکتا بھی نظر آتا ہے۔

کراؤن ہائیٹس نر سنگ سینٹر کی انتظامیہ کے مطابق ان تینوں خواتین کو ضعیف ہوجانے کے باعث ان کے اہلِ خانہ یہاں چھوڑ گئے تھے درجنوں بیٹوں اور پوتوں کی موجودگی کے باوجود سینٹر میں چھوڑا گیا ہے جہاں ان خواتین کی بہت اچھے طریقے سے نگہداشت کی جا رہی ہے اور ہر طرح کا خیال رکھا جاتا ہے۔

پرائس لوسیلی پرائس نے بتایا کہ سو سالہ زندگی پانے کا کوئی خاص راز نہیں ہے میں گھریلو خاتون ہوں جس نے وقت ضرورت ہیر ڈریسر کے طور پر بھی کام کیا لیکن کبھی سو سالہ زندگی پانے کے لیے کوئی منصوبہ بندی کی اور نہ ہی اس کا کوئی راز ہے۔

جب کہ 101 سالہ صوفیہ اسمتھ کا کہنا تھا کہ میری طویل عمری کا راز ’’چکن سوپ‘‘ ہو سکتا ہے کیوں کہ یہ وہ مرغوب غذا ہے جو میں کثرت سے استعمال کرتی ہوں اور زندگی بھر بہت پسندیدگی سے پیتی رہی ہوں اور میری زندگی میں یہی سب سے اہم اور منفرد چیز ہے۔

اسی طرح 102 سالہ گریس میری نے بتایا کہ میری طویل عمری کا راز ’خدا‘ ہے کیوں کہ اسی نے میرا خیال رکھا میں کئی بار بیمار ہوئی لیکن خدا نے مجھے صحت دی اس لیے میری طویل عمری کا راز ’خدا‘ کے سوا کچھ نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں