The news is by your side.

Advertisement

لداخ :سرحدی خلاف وزری پر چینی فورسز کا کرارا جواب، بھارتی کرنل سمیت 2 فوجی ہلاک

لداخ : بھارت اور چین میں کشیدگی جاری ہے ، چینی فورسز سے جھڑپ میں بھارتی فوج کے کرنل سمیت 2فوجی ہلاک ہوگئے، چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارتی فوجیوں نے سرحدی خلاف ورزی کی اور چینی فورسز پرحملے کئے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی فوج چین کے سرحدی علاقوں میں چھیڑ چھاڑ سے باز نہ آئی ، لداخ کے علاقےگلوان میں بھارتی فورسز کی چینی علاقے میں دراندازی پر چینی فورسزکے ساتھ جھڑپ ہوئی، جس کے نتیجے میں بھارتی کرنل اور دو بھارتی فوجی ہلاک ہوگئے۔

جھڑپوں کے بعد چین اور بھارت کی اعلیٰ فوجی قیادت کے درمیان ہنگامی رابطہ ہوا اور اعلیٰ فوجی قیادت کشیدگی میں کمی لانےکیلئے بات چیت کررہی ہیں۔

چینی وزارت خارجہ نے بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ روز بھارتی فورسز نے سنگین خلاف ورزی کرتے ہوئے 2بار سرحد عبور کی اور چینی فورسز پرحملے کیے، جھڑپ میں تین بھارتی فوجی مارے گئے۔

ترجمان کے مطابق بھارتی فوجیوں کی سرحدی خلاف وزری کے بعد بھارت اور چین کے اعلی فوجی حکام کا اجلاس ہوا، جس میں بھارت پر زور دیا ہے کہ اپنے فوجیوں کو سرحدی خلاف ورزی سے باز رکھے اور کوئی ایسا یکطرفہ اقدام نہ کرے ، جس سے سرحد پر صورتحال پیچیدہ ہو۔

چینی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک نے باہمی مسائل اور سرحدی صورتحال بات چیت سے حل کرنے اورسرحد پرامن وامان برقرار رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔

خیال رہے مئی میں لداخ میں چینی فورسزنے جھڑپ کے بعد بھارتی فوجیوں کوگرفتارکرلیا تھا، جنہیں بھارت کی درخواست پررہا کردیا گیا تھا۔

جھڑپ میں بھارتی فوجی کرنل 2فوجی مارے گئے تو اندازہ کریں کشیدگی میں کیا ہوگا، عمر عبداللہ


دوسری جانب جموں وکشمیر کے سابق وزیراعلیٰ عمرعبداللہ نے کہا ہے کہ چین کے ہاتھوں ہلاک اہلکاروں میں ایک بھارتی فوج کا کرنل بھی شامل ہیں، جھڑپ میں بھارتی فوجی کرنل 2فوجی مارے گئے تو اندازہ کریں کشیدگی میں کیا ہوگا، یہی ہوتا ہے جب میڈیا پروپیگنڈا کرے اور جب حکومت سے سوال پوچھنے والے کو غدار قرار دیا جائے۔

لگتا ہے چین نے گھر میں گھس کر ماریں گے کا جارحانہ بیان اپنا لیا ہے، محبوبہ مفتی


جموں وکشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ لگتا ہے چین نے گھر میں گھس کر ماریں گے کا جارحانہ بیان اپنا لیا ہے، بھارتی قوم جاننا چاہتی ہے 3فوجیوں کی موت کے بعد بدلے کی بات کیوں نہیں ہو رہی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں