The news is by your side.

Advertisement

پولیس وردی میں ٹک ٹاک بنانے والی لڑکی بڑی مشکل میں پھنس گئی

پولیس یونیفارم میں ٹک ٹاک ویڈیو بنانے والی منچلی لڑکی بڑی مشکل میں پھنس گئی۔

اوکاڑہ میں پولیس نے پولیس وردی میں ٹک ٹاک ویڈیو بنانے والی لڑکی کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ پولیس کے مطابق گزشتہ روز امبر نامی لڑکی نے پولیس یونیفارم میں ٹک ٹاک ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر وائرل کی تھی۔

پولیس تھانہ حجرہ نے ٹک ٹاکر لڑکی کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارنا شروع کر دیے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز پنجاب پولیس کی جانب سے اہلکاروں کے ”ٹک ٹاک“ استعمال کرنے پر پابندی عائد کرنے فیصلہ سامنے آیا تھا۔

وزیر اعظم سٹیزن پورٹل پر دوران ڈیوٹی پولیس اہلکاروں کے ٹک ٹاک استعمال کی شکایتیں درج کروائی گئیں جس پر پنجاب پولیس نے پابندی کا فیصلہ کیا۔

اے آئی جی آپریشنز کی جانب سے پنجاب بھر کے تمام آر پی اوز کو مراسلہ جاری کردیا گیا جس کے مطابق دوران ڈیوٹی اہلکار ٹک ٹاک کا استعمال نہیں کریں گے۔

مراسلہ کے مطابق یہ طرز عمل سوشل میڈیا پر محکمہ پولیس کے وقار کو مجروح کرتا ہے، احکامات کی عدم تعمیل کی صورت میں سخت کارروائی کی جاسکتی ہے۔

فحش مواد کے پھیلاؤ پر ٹک ٹاک پر ملک بھر میں متعدد بار پابندی لگائی جا چکی ہے۔ گزشتہ سال 19 نومبر کو پی ٹی اے نے ٹک ٹاک کو بحال کرنے کا اعلان کیا تھا۔

پی ٹی اے نے ٹک ٹاک انتظامیہ کی غیر اخلاقی مواد کنٹرول کرنے اور ویڈیوز ہٹانے کی یقین دہانی پر ٹک ٹاک بحال کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں