The news is by your side.

Advertisement

ایک سیکرٹ ایجنٹ کی کہانی جو مکمل نہیں ہوسکی

ہندوستانی سنیما میں فن کاروں اور دیگر آرٹسٹوں کے مابین چپقلش، رنجشیں، فلم سازوں کے مابین لڑائی جھگڑے اور مختلف معاملات پر مختلف نوعیت کے تنازعات کوئی نئی بات نہیں۔ اسی طرح بھاری بجٹ کے ساتھ فن کاروں سے معاہدہ کرکے معاوضہ طے کرنے اور خوب سوچ بچار کرنے کے بعد کسی فلم کی عکس بندی شروع کرنے والے فلم ساز اچانک ہی کام بھی سمیٹ لیتے ہیں اور اکثر اس کی کوئی وجہ بھی سامنے نہیں لائی جاتی۔

ہم ایک ایسی ہی فلم کی بات کررہے ہیں جس کی شوٹنگ ہفتے بھر بعد ہی روک دی گئی تھی۔ یہ مشہور ہدایت کار اور اداکار ٹینو آنند کی فلم تھی۔

1988 میں ٹینو آنند نے اپنی نئی فلم ”شناخت“ کی شوٹنگ شروع کرنے کا اعلان کیا۔ فلم ساز نے اس کا اعلان کرتے ہوئے اخبار نویسوں کو بتایا کہ اس میں مرکزی کردار بڑے پردے کے مشہور ہیرو امیتابھ بچن اور مقبول ترین اداکارہ مادھوری ڈکشٹ ادا کریں گے۔

ٹینو آنند نے فلم کی کہانی کے بارے میں بتایا کہ یہ ایک ایسے سیکرٹ ایجنٹ کے گرد گھومتی ہے جو ایک مشن کے دوران اپنی یادداشت کھو بیٹھتا ہے۔ یہ کردار امیتابھ بچن ادا کر رہے تھے۔

شناخت کی شوٹنگ شروع کر دی گئی اور ایک ہفتے تک یہ سلسلہ جاری رہا، مگر ٹینو آنند نے اچانک مزید کام روک دیا۔

اس پر سوال کیا گیا تو انھوں نے بتای کہ کسی نے توجہ دلائی ہے کہ یہ فلم گنگا جمنا سرسوتی کا چربہ ہے جو اس دور کی ایک کام یاب ترین فلم تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں