کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد ہونے کے خلاف اپیل کا آج آخری روز
The news is by your side.

Advertisement

الیکشن 2018 : کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد ہونے کے خلاف اپیل کا آج آخری روز

اسلام آباد : ریٹرننگ افسروں کی طرف سے قومی اور صوبائی اسمبلیوں کیلئے کاغذ ات نامزدگی منظور یا مسترد کئے جانے کے خلاف اپیلیں دائر کرنے کا آج آخری دن ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے لئے کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد کئے جانے کے خلاف اپیلیں دائر کرنے کی آج آخری تاریخ ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن نے اپیلوں کی سماعت کیلئے اکیس ٹربیونل قائم کئے ہیں،جس کے تحت خیبرپختونخوا ہ میں چھ، پنجاب میں آٹھ ،سندھ میں چار، بلوچستان میں دو اور اسلام آباد میں ایک ٹر بیونل قائم ہے۔

ایپلٹ ٹربیونل اس ماہ کی ستائس تاریخ تک اپیلوں کا فیصلہ کریں گے جس کے بعد اگلے روز امیدواروں کی نظرثانی شدہ فہرست شائع کی جائے گی۔

سندھ ہائیکورٹ /اپیلٹ ٹریبونل اپیلٹ ٹریبونل میں اب تک 80 سے زئد اپیلیں دائر ہو چکی ہیں، جسٹس کے کے آغا اور جسٹس یوسف سید اپیلوں پر سماعت کریں گے۔

دوران سماعت الیکشن کمیشن کے لا افسر جواب داخل کرینگے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ملک میں874جنرل نشستوں کیلئے 20099 میں سے 18203 کاغذات نامزدگی منظور اور 1896 مسترد ہوئے، وفاقی دارالحکومت کی 3 جنرل نشستوں کیلئے 129 میں سے 84 کاغذات نامزدگی منظور اور 45 مسترد کئے گئے۔

پنجاب کی قومی اسمبلی کیلئے 2550 میں سے 2342 کاغذات نامزدگی منظور اور 208 مسترد جبکہ پنجاب کی ہی 297 صوبائی نشستوں کیلئے 6741 میں سے 6173 کاغذات نامزدگی منظور اور 568 مسترد ہوئے۔

کے پی کی قومی اسمبلی کیلئے 726 میں سے 690 کاغذات نامزدگی منظور، 36 مسترد ہوئے جبکہ 124 صوبائی نشستوں کیلئے 2062 میں سے 1919 کاغذات نامزدگی منظور، 143 مسترد کئے گئے۔

سندھ کی قومی اسمبلی کیلئے1285 میں سے 1142 کاغذات نامزدگی منظور اور 143 مسترد جبکہ 143صوبائی نشستوں کیلئے 3626 میں سے 3246 کاغذات نامزدگی منظور اور 380 مسترد ہوئے۔

بلوچستان کی قومی اسمبلی کیلئے 435 میں سے 380 کاغذات نامزدگی منظور اور 55 مسترد ہوئے جبکہ 51 صوبائی نشستوں کیلئے 1447 میں سے 1181 کاغذات نامزدگی منظور اور 266مسترد کیے گئے۔

فاٹاکی قومی اسمبلی کی 12 نشستوں کیلئے 1098 میں سے کاغذات نامزدگی 1046 منظور ،52 مسترد ہوئے۔

قومی اسمبلی کی جنرل 272 نشستوں کیلئے 6223 میں سے 5684 کاغذات نامزدگی منظور، 539 مسترد جبکہ 602 صوبائی نشستوں کیلئے 13876 میں سے 12519 کاغذات نامزدگی منظور اور 1357 مسترد کئے گئے۔

دوسری جانب اپیلیں دائر کرنے کے آخری روز سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، عائشہ گلالئی اور مہتاب عباسی نے این اے 53 اسلام آباد سے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے آر او کے فیصلے کو چیلنج کردیا ہے۔

عمران خان کے کاغذات کی منظوری کو الیکشن ٹریبونل میں چیلنج کر دیا گیا، عمران خان کے کاغذات پرجسٹس اینڈ ڈیموکریٹ پارٹی نے اعتراض لگادیا عمران خان کراچی کے حلقے این اے 243 سے الیکشن میں حصہ لے رہےہیں۔

فاروق ستار بھی کاغذات کی بحالی کے لئے ٹریبونل سے رجوع کریں گے جبکہ خواجہ اظہار نےکاغذات کی بحالی کے لئے ٹریبونل سے رجوع کیا ہوا ہے عدالت نے الیکشن کمیشن کو 23 جون تک جواب جمع کرانے کی ہدایت کی ہے۔

پی پی کے قادرپٹیل، امجد اللہ ودیگر نے کاغذات کی بحالی کے لئے رجوع کیا ہے جبکہ لاہور ہائی کورٹ/اپیلٹ ٹریبونل ن لیگ کی ڈاکٹر عالیہ آفتاب کی کاغذات مسترد ہونے کے خلاف اپیل پر سماعت میں الیکشن ٹریبونل نے الیکشن کمیشن سےا سٹیٹ بنک کا جاری لیٹر طلب کر لیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں