The news is by your side.

Advertisement

طورخم بارڈر : پاکستان نے افغان وزارت خارجہ کا بیان سختی سے مسترد کردیا

اسلام ۤباد : پاکستان نے افغان وزارت خارجہ کا بیان مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک میں سرحد عالمی قوانین اور معاہدوں کے مطابق ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ افغان وزارت امور خارجہ کے حالیہ بیان کو غیرذمہ دارانہ اور بلاجواز قرار دے کر مسترد کرتے ہیں۔

پاکستان اور افغانستان کے درمیان سرحد عالمی سطح پر تسلیم شدہ ہے اور تمام متعلقہ عالمی قوانین اور ضابطوں کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان سرکاری سرحد ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ پاکستان اور افغانستان سرحد پر طور خم پوائنٹ کا چوبیس گھنٹے کے لئے کھل جانا سرحد کے دونوں طرف کے عوام کو سہولت بہم پہنچانے کے لئے نہایت اہم قدم ہے تاہم ایسے بیانات دونوں ممالک کے درمیان امن اور تعاون کے لئے عزم کو گزند پہنچاتے ہیں اور ان سے احتراز برتا جانا چاہئے۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ افغان وزارت خارجہ کا بیان غیرذمہ دارانہ ہے، پاک افغان بارڈر عالمی طور پر تسلیم شدہ سرحد ہے۔

دونوں ممالک میں سرحد عالمی قوانین اور معاہدوں کے مطابق ہے، طورخم پوائنٹ24گھنٹے کھلا رکھنے سے عوام کو مدد ملےگی، ایسے بیانات سے امن اورتعاون کی فضا پر منفی اثرات مرتب ہونگے۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم نے طور خم بارڈر 24 گھنٹے کھلا رکھنے کے منصوبے کا افتتاح کردیا

واضح رہے کہ دو روز قبل وزیراعظم عمران خان نے طور خم بارڈر 24 گھنٹے کھلا رکھنے کے منصوبے کا افتتاح کردیا ہے، طورخم ٹرمینل پورا ہفتہ 24گھنٹے سہولت فراہم کرے گا، طورخم ٹرمینل کاقیام پاکستان کی طرف سے افغان عوام کے لیے تحفہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں