The news is by your side.

Advertisement

عمان پہنچنے والے سیاحوں کے لیے نئی ہدایات جاری

مسقط: سلطنت عمان کی وزارت ثقافت و سیاحت نے اعلان کیا ہے کہ عمان آنے والے سیاحوں کو کووڈ 19 پی سی آر ٹیسٹ اور 14 روزہ قرنطینہ کی پابندی سے استثنیٰ دے دیا گیا ہے۔

ٹائمز آف عمان کی رپورٹ کے مطابق وزارت سیاحت نے کہا ہے کہ وزارت صحت کی جانب سے موصول کردہ نئی ہدایات کے پیش نظر یہ ممکن ہو چکا ہے کہ سلطنت عمان میں آنے والے سیاحوں کو آنے سے قبل لازمی کرونا وائرس پی سی آر ٹیسٹ، اور پہنچنے پر 14 روزہ قرنطینہ گزارنے سے مستثنیٰ کردیا جائے۔

وزارت کے مطابق تاہم سیاحوں کے پاس ہیلتھ انشورنس ہونی چاہیئے جو کووڈ 19 کا شکار ہوجانے کی صورت میں اس کے علاج کے اخراجات کور کر سکے۔

وزارت کی جانب سے جاری کردہ سرکلر میں کہا گیا ہے کہ سیاح عمان پہنچنے سے قبل پی سی آر ٹیسٹ کے لیے خود کو رجسٹر کروائیں جو عمان پہنچنے پر ایئرپورٹ پر ہوگا، اس ٹیسٹ کا رزلٹ منفی آنے تک سیاحوں کو الگ تھلگ رہنا ہوگا۔

حکام کی جانب سے کہا گیا ہے کہ زمینی راستوں سے عمان پہنچنے والوں کو زیادہ سے زیادہ 72 گھنٹے پہلے کروایا گیا پی سی آر ٹیسٹ دکھانا ہوگا جو نیگیٹو ہونا چاہیئے، زمینی راستوں کے چیکنگ پوائنٹس پر طبی معائنے کی سہولیات کی کمی ہے۔

مزید ہدایات کے مطابق عمان آنے والے سیاح 2 ہفتے سے زیادہ سلطنت میں قیام نہیں کرسکیں گے، ہر شخص یا ہر خاندان کو ہوٹل یا ریزورٹ میں علیحدہ کمرہ لینا ہوگا۔

سیاحوں کو یقینی بنانا ہوگا کہ ایئرپورٹ پر ہونے والے کووڈ ٹیسٹ کا رزلٹ منفی آنے تک وہ کمرے سے باہر نہ نکلیں اور زیادہ لوگوں سے گھلنے ملنے سے پرہیز کریں، ٹیسٹ منفی آجانے کے بعد باہر نکلنے پر سیاحوں کو تمام ایس او پیز پر سختی سے عمل کرنا ہوگا جیسے ماسک پہننا، سماجی فاصلہ رکھنا، اور ہاتھوں کو سینی ٹائزڈ کرتے رہنا۔

سلطنت کے تمام ہوٹلز اور ریزورٹس ہیلتھ سروسز اور ڈائریکٹوریٹ جنرل فار ڈیزیز سرویلنس سے رابطے میں ہوں گے۔ سلطنت میں اپنے قیام کے دوران اگر سیاح کھانسی، نزلہ زکام، بخار، سر درد، ڈائریا یا سانس کی تکلیف میں مبتلا ہوتے ہیں تو وہ فوری طور پر ہوٹل انتظامیہ کو مطلع کرنے کے پابند ہوں گے جس کے بعد انہیں طبی سہولت فراہم کی جائے گی اور اس عرصے کے دوران انہیں کمرے میں رہنا ہوگا۔

وزارت سیاحت کی جانب سے مزید کہا گیا کہ عمان پہنچنے والے سیاح اس بات کو دھیان میں رکھیں کہ وہ جس ایئر لائن سے سفر کر رہے ہیں اس کی تمام طبی ہدایات پر عمل کر رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں