The news is by your side.

Advertisement

پہلے نو ماہ میں تجارتی خسارے میں 14 فیصد کی نمایاں کمی

اسلام آباد : حکومتی مؤثر اقدامات کے بہتر نتائج نظر آنا شروع ہوگئے، رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ میں تجارتی خسارے میں چودہ فیصد کی نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی اقدامات کے بہتر نتائج کے باعث تیزی سے بڑھتے ہوئے تجارتی خسارے میں نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی، رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ میں تجارتی خسارے میں چودہ فیصدکی کمی ہوئی۔

ادارہ شماریات کےمطابق جولائی تامارچ تجارتی خسارےکاحجم تئیس ارب پینتالیس کروڑڈالررہا جوکہ گزشتہ سال اسی عرصےستائیس ارب انتیس کروڑڈالرتھا۔

اعداد وشمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ میں برآمدات کاحجم سترہ ارب اکیس کروڑڈالررہا جبکہ زیرغورعرصےدرآمدات کاحجم آٹھ فیصدکمی کےبعدچالیس ارب چھیانسٹھ کروڑڈالررہا جوکہ گزشتہ مالی سال کےاسی عرصےمیں چوالیس ارب بتیس کروڑڈالرتھا۔

مزید پڑھیں : مالی سال 2018-19ء کے ابتدائی آٹھ ماہ، تجارتی خسارے میں 11.03 فیصد کی کمی

صرف مارچ کے مہینے میں درآمدات میں خاطرخواہ کمی آئی، مارچ میں درآمدات کا حجم چوبیس فیصدکمی کےبعدچار ارب تین کروڑ ڈالررہا۔

کامرس ڈویژن کےمطابق درآمدات میں کمی کی وجہ حکومت کی جانب کئے گئے اقدامات اورپالیساں ہیں۔

یاد رہے مالی سال 2018-19 ء کے ابتدائی آٹھ ماہ ( جولائی تا فروری 2018-19ء ) کے دوران برآمدات اور درآمدات پر کنٹرول کے نتیجے میں تجارتی خسارہ 21.53 ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں