The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اور برطانیہ میں تجارت کا حجم3بلین پاؤنڈ ہو گا، ہائی کمشنر

اسلام آباد: برطانوی ہائی کمشنرکرسچن ٹرنر نےکہا ہے کہ پاکستان کےساتھ برآمد کا حجم3گناکر دیا ہے جو کہ بڑھ کر 3 بلین پاؤنڈ ہو جائے گا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام ‘پاورپلے’ میں گفتگو کرتے ہوئے برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ میری اردو خراب ہےلیکن سیکھ رہا ہوں،لوگوں کے ساتھ اردو میں بات کر کےاچھا لگتاہے ابھی بھی بہت اردوسیکھناباقی ہے۔

برطانوی ہائی کمشنرکرسچن ٹرنر نے کہا کہ مختلف علاقوں کادورہ کیاپاکستان بہت خوبصورت ہے، پاکستان میں سیاحت سےمتعلق بہترین مواقع ہیں، پاکستان میں ہیلتھ کیئر،ایجوکیشن،ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری ہونی چاہیے پاکستان نےسیکیورٹی پرجتناکام کیاہےوہ قابل ستائش ہے۔

کورونا سے نٹمنے کی حکمت عملی کو سراہتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دنیا کو کورونا پر پاکستان سےبہت کچھ سیکھنا ہوگا این سی اوسی کاقیام بہترین اقدام تھامیں بھی دورہ کیاتھا میرےخیال میں این سی اوسی کی طرح ہرحکومت کو کوآرڈی نیشن چاہیے، کورونا پرقابو سےمتعلق ایس اوپیزپرعمل کرناہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اوربرطانیہ میں تجارت کاحجم 3بلین پاؤنڈہوگا، چاہتا ہوں کہ پاکستان کیساتھ تجارتی حجم مزید بڑھایاجائے، برطانیہ پاکستان میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری چاہتا ہے برٹش ایئرویزکی پاکستان میں بحالی بہت اہم ہے، ورجن ایئرلائن دسمبرسےپاکستان میں آپریشن شروع کرناچاہتاہے۔

کرسچن ٹرنر نے کہا کہ افغان امن عمل میں پاکستان کاکردارقابل تعریف ہے، پاکستان معاشی لحاظ سےمثبت اقدامات اٹھارہاہے، آپ صرف اسلام آبادسےپاکستان کےبارےمیں اندازہ نہیں لگاسکتے، اسلام آبادمیں بھی لوگوں سےملاقاتیں کرتاہوں، آئندہ کچھ دنوں میں پاکستان کےمختلف علاقوں میں جاؤں گا، لاہوراورکراچی جانےکابھی ارادہ رکھتاہوں میراکام ہےباہرنکلوں اورپاکستان کےعوام سےملوں گا۔

ہائی کمشنر نے کہا کہ پاکستان کے پاس قیمتی تاریخی ورثہ موجودہے، پاکستان قدرتی حسن سےمالامال ہے،پاکستانی کرکٹ ٹیم کادورہ انگلینڈزبردست رہا جس طرح پاکستانی کھلاڑی گئےوہ قابل ستائش ہے، اےآروائی نیٹ ورک کوسالگرہ کی مبارکباددیتاہوں،ادارے کو بیسویں سالگرہ مبارک ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں