The news is by your side.

Advertisement

چین نے 128 امریکی اشیاء پر 25 فیصد محصولات عائد کردئیے

بیجنگ: چین نے امریکا سے درآمد کی جانے والی 128 اشیاء پر 25 فیصد تک محصول عائد کردیا ہے جن میں شراب اور گوشت بھی شامل ہیں۔

چین نے درآمدی محصول میں اضافہ امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے اسٹیل اور المونیم کی امریکا میں درآمدات پر محصول کے اضافے کے جواب میں کیا ہے۔

محصول میں اضافے سے ایک دن میں تین ارب ڈالر درآمدات متاثر ہوں گی، چین نے کہا ہے کہ یہ اقدام چینی مفادات کے تحفظ اور امریکا کے نئے محصول سے ہونے والے نقصانات کے سلسلے میں توازن پیدا کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ تجارتی جنگیں اچھی ہوتی ہیں اور امریکا کے لیے یہ جنگ جیتنا لازمی ہے جبکہ چین کا کہنا تھا کہ وہ تجارتی جنگ نہیں چاہتا لیکن اگر ان کی معیشت اثر انداز ہوئی تو وہ خاموش نہیں بیٹھے گا۔

چین کا کہنا ہے کہ امریکا سے آنے والے اسکریپ المونیم کے علاوہ دیگر اشیاء پر بھی 25 فیصد محصول لگائے جائیں گے۔

مزید پڑھیں: ٹرمپ نے چینی اشیاء پر60ارب ڈالرکے محصولات عائد کردیئے

خیال رہے کہ امریکا نے بھی چین سے درآمد اشیاء پر 50 بلین محصول لگانے کا اعلان کررکھا ہے، یہ چین کی جانب سے ناجائز عمل میں کئے جانے والے اقدام ہیں کیونکہ ان سے امریکی کمپنیاں متاثر ہوتی ہیں۔

وہائٹ ہاؤس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ امید کرتے ہیں کہ دوسرے ممالک بھی چین کے خلاف اس اقدام میں ان کا ساتھ دیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں