The news is by your side.

Advertisement

آئی جی اسلام آباد کے تبادلے کے معاملے پر آج سپریم کورٹ میں سماعت ہوگی

اسلام آباد: وزیرِ اعظم عمران خان کے حکم پر آئی جی اسلام آباد جان محمد کے تبادلے کے معاملے پر آج سپریم کورٹ میں سماعت ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق آج سپریم کورٹ میں اسلام آباد کے آئی جی جان محمد کے تبادلے کے معاملے پر سماعت ہو گی، آئی جی کے تبادلے کے احکامات وزیرِ اعظم عمران خان نے زبانی طور پر دیے تھے۔

وفاقی وزیر اعظم سواتی کا ذاتی حیثیت میں سپریم کورٹ میں پیش ہونے کا امکان ہے

سپریم کورٹ میں وفاقی وزیر اعظم سواتی کا ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا امکان ہے، وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ اعظم سواتی غلط ہیں یا صحیح، مسئلہ یہ نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اصل مسئلہ یہ ہے کہ کس طرح ہو سکتا ہے کہ ایک آئی جی وفاقی وزیر کا فون نہ اٹھائے، وزیرِ اعظم آئی جی کو نہیں ہٹا سکتا تو پھر الیکشن کرنے کا کیا فائدہ ہے، بیوروکریسی میں کچھ افسران پالیسی فالو نہیں کر رہے ہیں۔

دوسری طرف گرفتار شخص کے بھائی نے الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی وزیر گھر پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں، فارم میں گائے گھسنے کا تو بہانہ تھا۔


یہ بھی پڑھیں:  وزارت داخلہ نے آئی جی اسلام آباد جان محمد کو ملائیشیا سے واپس بلالیا


نیاز کی بیٹی کہتی ہے کہ ہم نے کوئی غلطی نہیں کی پھر بھی والدین، بہن اور بھائیوں کو جیل میں ڈال دیا گیا، حکومت اور چیف جسٹس سے انصاف کی اپیل ہے۔

دریں اثنا اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں یہ انکشاف بھی ہوا ہے کہ آئی جی اسلام آباد کا دو بار سینیٹر اعظم سواتی سے رابطہ ہوا تھا۔

سینیٹر اعظم سواتی کے آئی جی اسلام آباد سے رابطے کے بعد ایس ایس پی امین بخاری کو اعظم سواتی کے پاس بھیجا گیا تھا، ایس ایس پی امین بخاری دو بار جمعرات اور جمعہ کو اعظم سواتی کے پاس گئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں