The news is by your side.

Advertisement

شریف خاندان کے برطانوی اثاثوں کی چھان بین کی جائے، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل

لندن : ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے برطانیہ سے نوازشریف کے اثاثوں کی چھان بین کا مطالبہ کردیا، برطانوی حکومت کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ سابق وزیر اعظم کی جائیدادیں ناجائز ذرائع سےحاصل کی گئی ہیں تو انہیں ضبط کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق عالمی تنظیم ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے سابق وزیر اعظم نوازشریف کی لندن جائیداد کے حوالے سے برطانوی حکومت کو خط لکھا ہے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ عدالتی فیصلے کے بعد وزارت عظمیٰ سے نااہل ہو نے والے نواز شریف کی لندن میں جائیداد پرکارروائی کی جائے۔

تحقیقات کے بعد ان کی اگر جائیداد ناجائز ذرائع سے حاصل کی گئی ہے تو اسے فوری طور پر ضبط کیا جائے، خط میں مزید کہا گیا ہے کہ کیا جائیداد تاحال نوازشریف کے اہل خانہ کی ملکیت ہے؟ کیا شریف خاندان چار جائیدادوں کی ملکیت کا دعویدار ہے، فلیٹس پاناما لیکس میں بتائی گئیں آف شور کمپنیوں کے پاس ہیں۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ پاناما لیکس کے مطابق آف شور کمپنیاں نوازشریف کے رشتےداروں کی ہیں، لہٰذا آف شور کمپنیوں کی ملکیت کےبارے میں شبہات ہیں، تحقیقات کی جائیں کہ برطانیہ میں غیرملکی کمپنیوں کےاصل مالک کون ہیں؟ تاہم شواہد کی عدم موجودگی پر نہیں کہا جا سکتا کہ کمپنیز کون چلارہا ہے۔

نوازشریف کا کیس تمام صورتحال کیلئے مثالی ہے، ڈپٹی ڈائریکٹر پالیسی ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل ڈنکن ہیمز کا کہنا ہے کہ برطانوی حکومت ایسی جائیدادیں ضبط کرکے واپس لے، اثاثے وہیں واپس کریں جہاں سے انہیں لوٹا گیا ہے، انہوں نے کہا کہ فوری اقدامات نہ کیے گئے تو برطانیہ لوٹ مار کی رقم چھپانے کی جگہ بن جائیگا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں