The news is by your side.

Advertisement

ہزارہ ٹاؤن کے اطراف میں مکینوں کی حفاظت کے لیے خندق کھود دی گئی

ہزارہ ٹاؤن حملوں میں ملوث کالعدم تنظیم کا اہم کمانڈر عبدالرحیم گرفتار

کوئٹہ: مسلسل دہشت گردی کے شکار علاقے ہزارہ ٹاؤن کے اطراف میں مکینوں کی حفاظت کے لیے خندق کھود دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق ایف سی حکام نے بتایا ہے کہ ہزارہ ٹاؤن کے دو اطراف میں کھودی گئی خندق کا مقصد علاقے میں جرائم پیشہ عناصر کا داخلہ روکنا ہے۔

یہ خندق ڈان باسکو اکیڈمی سے لے کر گلزار کالونی تک کھودی گئی ہے، خندق کی طوالت پانچ کلو میٹر ہے جب کہ اس کی گہرائی اور چوڑائی آٹھ فٹ ہے۔ ایف سی حکام کے مطابق اس خندق کے بننے سے ہزارہ ٹاؤن مزید محفوظ ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ بلوچستان میں ہزارہ برادری کا قتل عام سنگین نوعیت اختیار کرچکا ہے، آج پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کوئٹہ کے خصوصی دورے پر ہیں جہاں انھوں نے کئی روز سے دھرنے پر بیٹھے ہزارہ برادری کے عمائدین سے ملاقات کی۔ ایک روز قبل وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے بھی کوئٹہ جاکر ان سے مذاکرات کیے تھے۔

کوئٹہ میں نامعلوم افراد کی فائرنگ‘ 2 افراد جاں بحق

ہزارہ ٹاؤن حملوں میں ملوث دہشت گرد گرفتار


دوسری طرف کوئٹہ میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کے ڈی آئی جی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہزارہ ٹاؤن حملوں میں ملوث کالعدم تنظیم کا اہم کمانڈر عبدالرحیم گرفتار کرلیا گیا ہے۔ عبد الرحیم خود کش حملوں اور ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ہے۔ پریس کانفرنس میں دہشت گرد کا اعترافی بیان بھی دکھایا گیا۔

ڈی آئی جی اعتزاز گورایہ نے میڈیا کو بتایا کہ گرفتار دہشت گرد ہزارہ برادری کی ٹارگٹ کلنگ کی نو وارداتوں اور گومل یونی ورسٹی خودکش حملے میں بھی ملوث تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ حالیہ ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں پیش رفت ہوئی ہے، دہشت گرد کے ساتھیوں کی گرفتاری کی لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں