The news is by your side.

Advertisement

پرویز رشید کی کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کیخلاف اپیل، پنجاب ہاؤس اور الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری

لاہور : الیکشن ٹریبونل نے پرویز رشید کی ریٹرنگ آفیسر کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف اپیل پر پنجاب ہاؤس اور الیکشن کمیشن کونوٹس جاری کرتے ہوئے پنجاب ہاؤس کے ذمہ دار افسر کو ریکارڈ سمیت طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد وحید پر مشتمل الیکشن ٹریبونل نے پرویز رشید کی اپیل پر سماعت کی ، پرویز رشید اپنے وکلا سمیت پیش ہوئے ۔

ان کے وکیل نے دلائل دیے کہ پرویز رشید نے واجبات ادا کرنے کی کوشش کی لیکن واجبات وصول نہیں کیے گئے، پرویز رشید 28 گھنٹے پیسے لے کر پھرتے رہے لیکن کسی نے رقم وصول نہیں کی ۔

جسٹس شاہد وحید نے ریمارکس دیے کہ پرویز رشید نے جب پنجاب ہاوس سے چیک آؤٹ کیا تب ہی یہ رقم جمع کرانی چاہیے تھی، جس پر پرویز رشید کے وکیل نے کہا کہ پرویز رشید سینٹ کے ممبر تھے کوٸی مفرور نہیں تھے، چیرمین سینٹ کو نوٹس جاری کر کے بھی یہ وصولی کی جا سکتی تھی ۔

وکیل پرویز رشید کا کہنا تھا کہ ریٹرننگ افسر نےپیسے جمع کرانے کاکہامگر کوئی وصول کرنےوالانہیں تھا، اگر نادہندہ تھےتو اس کےلیے قانون موجود ہے، ریٹرننگ افسر نےواجبات جمع کرانے کی سہولت دی مگروصولی نہیں کی گئی، موجودہ کیس میں تحقیقات ہوئیں۔

عدالت نے کہا آپ کا کہنا ہے کہ اس کا ریکاڈر منگوا لیں، جس پر وکیل کا کہنا تھا کہ 3 بار سینیٹررہے ،2013 سے نادہندہ تھے تو انتخاب کیسے لڑنے دیا گیا۔

عدالت نے سماعت کے بعد الیکشن کمیشن اور پنجاب ہاوس کو 23 فروری کے لیے نوٹس جاری کر دیے اور پنجاب ہاؤس کے ذمہ دار افسر کو ریکارڈ سمیت طلب کر لیا۔

سماعت کے بعد پویز رشید کے کاغذات نامزدگی پر اعترض کنندہ ایڈووکیٹ رانا مدثر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوٸے کہا کہ پہلے پنجاب ہاؤس ان کے اپنے کنٹرول میں تھا اب نہیں ہے تو سب سامنے آ رہا ہے ۔ ریکارڈ آئے تو سب معاملہ کلئیر ہو جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں