The news is by your side.

Advertisement

انتخابات میں روسی مداخلت کا معاملہ، ٹرمپ نے رپورٹ ایک بار پھر مسترد کردی

واشنگٹن: امریکا میں صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت سے متعلق میولر رپورٹ صدر ٹرمپ نے ایک بار پھر مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق امریکا میں گذشتہ صدارتی انتخابات سے متعلق میولر رپورٹ سامنے آئی جس میں روسی مداخلت کا انکشاف ہوا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں میولر رپورٹ کو ایک بار پھر مسترد کردیا۔

انہوں نے کہا کہ حال ہی میں پیش کی گئی میولر رپورٹ کے نتائج کی بنیاد پر ان کا مواخذہ امریکی کانگریس نہیں کرسکتی، رپورٹ بے بنیاد اور حقائق کے منافی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ مواخذہ صرف کسی بڑے جرم کے ارتکاب پر ہی کیا جا سکتا ہے اور انہوں نے کوئی جرم نہیں کیا، جب کوئی جرم ہوا ہی نہیں، تو جواب طلبی کیسے کی جاسکتی ہے۔

ٹرمپ نے حال ہی میں اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ میولر رپورٹ لوگوں نے مل کر تیار کی ہے، جو واضح طور پر جھوٹی اور افواہوں پر مبنی ہے، جس میں کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے خلاف دو سال سے جاری رابٹ ملر کی خصوصی تحقیقات گذشتہ ماہ اختتام پذیر ہوئی تھی، ابتدائی طور پر تحقیقاتی رپورٹ میں صدر ٹرمپ پر کوئی جرم ثابت نہیں ہوا تھا۔

امریکی انتخابات میں مداخلت کا معاملہ، روس اور امریکا نے رپورٹ مسترد کردی

خیال رہے کہ رپورٹ کے خلاصے میں کہا گیا تھا کہ صدر ٹرمپ کی انتخابی مہم کے دوران روس کے ساتھ کسی ملی بھگت کوئی ثبوت ملا۔

بعد ازاں ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ دو سال سے ان کے خلاف مفروضوں پر مبنی الزامات لگائے گئے اور آج سب جھوٹ ثابت ہوئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں