site
stats
عالمی خبریں

ٹرمپ نےافغانستان میں امریکی فوج کی تعداد بڑھانے کی اجازت دے دی

واشنگٹن:امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پینٹاگون انتظامیہ کو افغانستان میں امریکی فوج کی تعداد میں اضافے کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کےمطابق پینٹاگون کے چیف جیمس میٹس اب براہ راست فوجیوں کی تعداد میں اضافہ کرسکیں گے۔اس اجازت کے بعد ٹرمپ نے دونوں ممالک میں داعش کے خلاف لڑائی کے لیے جنگ کی اجازت دی تھی۔

خیال رہےکہ یہ پیش رفت ڈیفنس سیکریٹری جیمس میٹس کی جانب سے قانون سازوں کے سامنے اس اعتراف کے بعد سامنے آئی ہے جس میں انھوں نے بتایا تھا کہ امریکہ اب بھی افغانستان میں جنگ نہیں جیت رہا ہے۔

امریکی ڈیفنس سیکریٹری جیمس میٹس نے کانگریس پینل کو بتایا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ کو افغانستان کی صورت حال میں پاکستان اور بھارت کے درمیان جاری کشیدگی کے اثرات کو بھی افغان پالیسی میں شامل کرنا چاہیے۔

یاد رہے ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملے کے بعد امریکا کی جانب سے افغانستان پر فوجی چڑھائی کی گئی تھی، 17 سال سے امریکی اور نیٹو فوجی افغانستان میں تعینات ہیں اور وہ مقامی فوجیوں کے ساتھ مل کر افغانستان میں کام کررہے ہیں۔


برطانیہ کا افغانستان میں‌ مزید فوجی تعینات کرنے کا فیصلہ


واضح رہےکہ گزشتہ سال جولائی میں برطانیہ نے افغانستان میں مزید پچاس فوجی اہلکار بھیجنے کا فیصلہ کیا تھا جو وہاں موجود افغان سیکیورٹی اہلکاروں کو تربیت دیں اور موجودہ صورتحال سے نمٹنے کےلیے اقدامات تجویز کریں‌گے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top