site
stats
عالمی خبریں

امریکا کا قانونی تارکین وطن کی تعداد نصف کرنے پر غور

legal immigration

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تارکین وطن کی تعداد کم کرنے کیلئے نیا قانون لانے کی تجویز پیش کر دی ہے جبکہ گرین کارڈ کے حصول کیلئے پوائنٹس سسٹم متعارف کرانے کا فیصلہ کیا جارہا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور دو ری پبلکن سینیٹرز ٹام کاٹن اور ڈیوڈ پیرڈو نے امیگریشن پالیسیز کے حوالے سے نیا قانون پیش کرنے کا اعلان کر دیا ہے، اس قانون کے آنے سے نہ صرف قانونی تارکین وطن کی تعداد نصف کر دی جائے گی بلکہ گرین کارڈز کے حصول کیلئے شرائط کو بھی مزید سخت کیا جائے گا۔

ڈونلڈ ٹرمپ امریکی صدر امیگریشن پالیسیوں میں نئی اصلاحات سے تارکین وطن کی سالانہ تعداد دس لاکھ سے کم کر کے پانچ لاکھ کرنے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ گرین کارڈ کے حصول کیلئے انگریزی بولنا اور سمجھنا بھی لازمی ہوگا۔

اس بل کے حوالے سے وائٹ ہاؤس میں صحافیوں کی صدر ٹرمپ کے خصوصی مشیر سے سوال و جواب میں تلخ کلامی بھی ہوئی، اسٹیفن ملر مشیر وائٹ ہاؤس تجویز کردہ نئے قوانین کے مطابق اب امیگریشن کیلئے اچھی انگریزی بولنے والے ہنر مندوں کو ترجیح دی جائے گی۔

نئے قوانین میں گرین کارڈ کے حصول کیلئے تیس پوائنٹس حاصل کرنا ضروری ہوں گے، جس میں عمر، تعلیم، ہنر، تنخواہ، انگریزی بولنا، نوبل انعام، بہترین کھلاڑی، اور سرمایہ کاری کرنے جیسی شرائط شامل ہیں۔

دوسری جانب نئے قوانین کی تجویز پر امریکہ بھر میں انسانی حقوق کی تنظیموں نے مظاہروں کا اعلان بھی کر دیا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top