The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش، صدر آزاد کشمیر کا خیرمقدم

مظفرآباد: آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کا ایک بار پھر خیرمقدم کیا۔

صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان کا پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے مذاکرات دنیا میں کسی بھی جگہ ہو سکتے ہیں، مذہبی انتشار کیلئے مقبوضہ کشمیر کے انتخابی حلقوں کو تبدیل کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان کا آبادی کے تناسب کو بدلنا شملہ معاہدے کی خلاف ورزی ہے، امریکی صدر کی ثالثی کی پیشکش کو بھارت نے ایک بار پھر مسترد کر دیا، پلوامہ کے بعد بھارت نے مقبوضہ کشمیر کے عوام پر ظلم شروع کر دیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مذہبی انتشار کیلئے مقبوضہ کشمیر کے انتخابی حلقوں کو تبدیل کیا جارہا ہے، بھارتی ریاستوں کے لوگوں کو کشمیر میں آباد کیا جا رہا ہے۔

امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کی مسئلہ کشمیرپرایک بار پھر ثالثی کی پیشکش

انہوں نے کہا کہ لوگوں کو اسلحے کی نوک پر حراساں کیا جا رہا ہے، ہندوستان کے اس اقدام پر لوگ سراپا احتجاج ہیں، بھارت دہشتگری کے تحت نہتے کشمیریوں پر ظلم کر رہا ہے۔

سردار مسعود خان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ نے بھی کشمیر میں بھارتی مظالم پر خاموشی اختیار کی ہے، مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے مذاکرات دنیا میں کسی بھی جگہ ہو سکتے ہیں، ٹرمپ نے ایک مرتبہ پھر ثالثی کا کہا ہے اور بھارت نے پھر اس آفر کو ٹھکرا دیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں