site
stats
عالمی خبریں

امریکی صدر کاغیر قانونی مقیم بچوں کوامریکا بدر کرنے کا فیصلہ

واشنگٹن:امریکی صدر کاغیر قانونی مقیم بچوں کوامریکابدرکرنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور بغیر دستاویزات کے امریکا آنے والے بچوں کو تحفظ فراہم کرنیوالا بل منسوخ کردیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سابق امریکی صدر براک اوباما کے امریکہ میں جنم لینے اور بچپن میں آنے والے بچوں کو تحفظ دینے کے قانون(ڈاکا) کو ختم کردینے کے احکامات جاری کر دیئےہیں۔

پروگرام منسوخی سے 8لاکھ بچے جواب جوان ہیں، امریکا میں نہیں رہ سکیں گے، کانگریس 6ماہ میں فیصلہ کرے گی، یہ بچے امریکامیں رہ سکتے ہیں یا نہیں۔

سینیٹربرنی سینڈرز کا کہنا ہے کہ صدرٹرمپ کا ڈاکا پروگرام ختم کرنے کا فیصلہ ظالمانہ ہے، سینٹ ڈاکا پروگرام کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے قانون منظور کرے۔

خیال رہے کہ امریکاآنے والے بچوں کوتحفظ فراہم کرنےکیلئے اوباما نے پروگرام ڈاکا شروع کیا تھا۔

دوسری جانب ٹرمپ اور امریکہ کے اٹارنی جنرل کی جانب سے امریکہ میں بچوں کے عدم تحفظ پر امریکہ میں مقیم بچے اس اقدام پر اپنے مستقبل کے اندیشوں میں سراپا احتجاج بن گئے ہیں اور نیو یارک سمیت ملک کے دیگر شہروں میں صدر ٹرمپ کے اس قدم کے خلاف ہنگامے اور احتجاج کا سلسلہ چل نکلا ہے۔

میکسیکو کی حکومت نے صدر ٹرمپ کے ڈاکا منصوبے کو ختم کرنے کے قدم کو غیر انسانی عمل قرار دے کر اس قانون پرفوری عمل در آمد کا مطالبہ کیا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top