The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ نے کابینہ میں اہم عہدوں کیلئے دوستوں، رشتے داروں کا انتخاب کرلیا

واشنگٹن : امریکا کے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنی کابینہ کی تشکیل میں مصروف ہیں، ٹرمپ نے اہم عہدوں کے لئے قریبی دوستوں اور عزیزوں کا انتخاب کرلیا ہے جبکہ کابینہ کے انتخاب پرٹرمپ کو تنقید کا سامنا ہے۔

نو منتخب امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ اپنی حکومت کے اہم عہدوں کے لئے لوگوں کے چناؤ میں مصروف ہیں، ٹرمپ کی نگاہ انتخاب صرف قریبی دوستوں اور عزیزوں پر ہے۔

اٹارنی جنرل کے لئے جیف سیشنز کو پیشکش کی گی ہے ، سینیٹر جیف سابق پراسیکیوٹر ہیں اور وہ 1996 میں سینیٹر منتخب ہوئے تھے۔

نیشنل سیکورٹی ایڈوائز کے لئے جنرل مائیکل فلن کا انتخاب کیا گیا ہے ، جبکہ سی آئی اے ڈائریکٹر کے لئے مائیک پومپیو کو منتخب کرلیا۔

خیال رہے کہ یہ افراد متنازع بیانات کی وجہ سے جانے جاتے ہیں اور ٹرمپ کے قریبی ساتھی ہیں۔

اوباما نے جنرل مائیکل کو ا ڈیفنس انٹیلیجنس ایجنسی کے ڈائریکٹر کے عہدے سے فارغ کیا تھا جبکہ جنرل مائیکل اس وقت سے اوباما کے خلاف ہیں۔

سی آئی اے ڈائریکٹر کے عہدے کیلئے منتخب کئے جانے والے مائیک پومپیو نے ابتدا میں مارکو روبیو کی حمایت کی تھی لیکن صدارتی امیدوار کی دوڑ جیتنے کے بعد انھوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کی حمایت کا اعلان کیا تھا۔

trumpm-1

یاد رہے کہ اس سے قبل امریکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ میں باب کارکر کی شمولیت کا امکان ہے، سینیٹر باب کارکر پاکستان مخالف پالیسی کے حوالے سے جانے جاتے ہیں، انھوں نے پاکستان کو ایف سولہ طیاروں کی فروخت پر اعتراضات اٹھائے تھے اور پاکستان کی فوجی اور سویلین امداد پر پابندی کا مطالبہ بھی کیا تھا۔


مزید پڑھیں : ٹرمپ کابینہ میں پاکستان مخالف باب کارکر کی شمولیت کا امکان


امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق ٹرمپ کے ایک اور قریبی ساتھی جیف سیشنز کا نام وزیر دفاع کے طور پر لیا جارہا ہے، مائیکل فیلن جو کہ لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر بھی فائز رہ چکے ہیں، قومی سلامتی کے مشیر کے طور پر مقرر کئے جاسکتے ہیں۔

سٹیون مینچن کا نام وزیر خزانہ کے طور پر لیا جارہا ہے جبکہ روڈی جولیانی کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ وہ اٹارنی جنرل کا عہدہ سنبھال سکتے ہیں۔

ٹرمپ کی کابینہ سب سے اہم عہدہ وزیر خارجہ اوراس اہم عہدے کے لئے نیوٹ گنگرچ کا نام لیا جارہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں