امریکی صدر ٹرمپ نے چین پر 200 ارب ڈالر کی اضافی ڈیوٹیز عائد کردیں trump
The news is by your side.

Advertisement

امریکی صدر ٹرمپ نے چین پر 200 ارب ڈالر کی اضافی ڈیوٹیز عائد کردیں

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چین پر مزید 200 ارب ڈالر کی اضافی ڈیوٹیز عائد کردی ہیں، چین کی جانب سے امریکی اقدامات کا بھرپور جواب دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکا اور چین کے درمیان تجارتی جنگ میں مزید شدت آگئی ہے، امریکی صدر ٹرمپ نے چین پر اضافی ڈیوٹیز عائد کردیں، نئی ڈیوٹیز کا حجم دو سو ارب ڈالر ہے، تجارتی جنگ کے باعث ایشیائی حصص بازار مندی کا شکار نظر آئے۔

ٹرمپ کی جانب سے اس بار عام استعمال کی اشیاء پر ڈیوٹیز لگائی گئی ہیں، ان اشیاء میں فرنیچر، لائٹس، ٹائرز اور بچوں کی کار سیٹ بھی شامل ہیں۔

دوسری جانب چینی حکام نے امریکی اقدامات کا بھرپور جواب دینے کا فیصلہ کیا ہے، چینی حکام کا کہنا ہے کہ نئی ڈیوٹیز کے نقصانات کا بغور جائزہ لے رہے ہیں۔

چینی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ اگر یہ تجارتی جنگ وسیع ہوتی ہے تو سب سے زیادہ امریکی معیشت کو ہی نقصان پہنچے گا، چین ہر حالات سے مقابلہ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

مزید پڑھیں: تجارتی جنگ: امریکا نے چینی درآمدات پر دوسری مرتبہ اضافی ٹیکس عائد کردیے

واضح رہے کہ امریکا نے اس سے قبل بھی چین پر پچاس ارب ڈالر کی ڈیوٹیز عائد کی تھیں جبکہ چین نے بھی امریکا پر 60 ارب ڈالر کی ڈیوٹیز عائد کی تھیں۔

امریکا کے اس اقدام کے بعد آج چین سمیت ہانگ کانگ، جاپان اور کورین اسٹاک مارکیٹ میں خاطر خواہ کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں