The news is by your side.

Advertisement

کیمیائی حملے کے جواب میں شامی ایئر بیس پر حملہ کیا، ٹرمپ

واشنگٹن : امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ امریکا نےکیمیائی حملے کےجواب میں شامی ایئربیس پرحملہ کیا تھا۔

اس بات کا انکشاف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے کیا انہوں نے ان حالات کا بھی ذکر کیا کہ جب امریکا کی جانب سے شامی ایئر بیس پر حملہ کیا گیا۔


*شام پرحملہ: روس نے امریکا کےساتھ فضائی تحفظ کا معاہدہ معطل کردیا


صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے انٹرویو دیتے ہوئے میزبان کے سوال کے جواب میں بتایا کہ شام پرمیزائل حملےکاحکم اس وقت دیا جب میں چین کے صدر کے ساتھ کھانا کھاتے ہوئے دیا۔


*شام میں کیمیائی حملہ انسانیت کی توہین ہے،صدرٹرمپ


صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بتایا کہ ہم کھانا کھانے کے بعد میٹھےمیں چاکلیٹ کیک کھا رہے تھے تو اس وقت بحیرہ روم میں امریکی جنگی بیڑہ لاک اور لوڈڈ تھا اور اسی وقت فیصلہ ہوا اور میزائل اپنے راستے پر روانہ ہوگئے۔


*شام میں مبینہ کیمیائی حملہ‘ سلامتی کونسل کا اظہارِ تشویش


صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ دورانِ طعام چین کے صدر کو اس حملے سے آگاہ کیا کہ ہم نے ابھی 59 میزائل فائر کیے ہیں جس پر معزز مہمان نے حمایت میں سر ہلاتے ہوئے کہا کہ جو ملک بچوں پر کیمیائی حملہ کرے تو ایسے ملک کو نشانہ بنانا بالکل ٹھیک ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں