The news is by your side.

Advertisement

ڈونلڈ ٹرمپ کا خفیہ ایجنسی کی سربراہ کو دوبارہ اسکول جانے کا مشورہ

واشنگٹن : ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران سے متعلق امریکی خفیہ اداروں کی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ’ایران سے ہوشیار رہیں‘۔

تفصیلات کے مطابق ایک روز قبل امریکی خفیہ ایجنسیوں نے سینیٹ میں ایران اور شمالی کوریا سے متعلق اپنی رپورٹ پیش کی، جس میں خفیہ ادارے کے سربراہ نے بتایا کہ ایران معاہدے کی پاسداری کررہا ہے جوہری ہتھیار نہیں بنارہا۔

امریکی خفیہ ایجنسی کے سربراہ کا کہنا تھا کہ امریکا نے ایران کے ساتھ طے شدہ جوہری معاہدے سے علیحدگی اختیار کرکے اس پر اقتصادی پابندیاں عائد کی تھیں۔

خفیہ ایجنسیوں کی جانب سے پیش کردہ رپورٹ پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ’خفیہ اداروں کے افراد کو دوبارہ اسکول جانا چاہیے‘۔

امریکی صدر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ایران سے ہوشیار رہیں، امریکی خفیہ ایجنسیاں کم علمی اور بھولے پن کا شکار ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایران نے اپنی تقریب کاریوں سے پورے خطے کو مشکلات میں مبتلا کر رکھا تھا اور امریکا کے علیحدگی اختیار کرنے کے بعد بھی اپنی تقریب کاریوں سے باز نہیں آیا لیکن علیحدگی سے حالات میں کافی تبدیلی آئی ہے۔

مزید پڑھیں : امریکا کی علیحدگی کے باوجود ایران جوہری معاہدے پر عمل پیرا ہے: سی آئی اے

خیال رہے کہ امریکی سی آئی اے کی خاتون سربراہ نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ جوہری ڈیل 2015 پر ایران اب بھی عمل درآمد کررہا ہے تاہم اس کے چند اہداف بھی ہیں جسے وہ حاصل کرنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران اس ڈیل پر عمل پیرا رہتے ہوئے یورپ پر دباؤ بڑھانا چاہتا ہے تاکہ معیشت کی بہتری اور تجارت سے متعلق فوائد حاصل کیا جاسکے۔

سی آئی اے سربراہ کا کہنا تھا کہ ایرانی انتظامیہ نے معیشت کی بہتری کے لیے یورپ سے جو توقع رکھی تھی اس میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں