site
stats
عالمی خبریں

امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی مسلمانوں کے خلاف نئے منصوبے کی تیاری

واشنگٹن : امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کے متنازع فیصلوں کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا، امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے مسلمانوں کے خلاف نئے منصوبے کی تیاری شروع کردی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق امریکی صدر نے شدت پسندی کو اسلام سے جوڑنے کی ٹھان لی ہے، نئی امریکی حکومت نے ’ انسداد شدت پسندی پروگرام‘ کا نام بدل کر ’انسداد اسلامی شدت پسندی‘ کرنے کی تیاری میں مصروف ہیں۔

t

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ ’’انسداد شدت پسندی’’پروگرام کو صرف اور صرف مسلمانوں کے خلاف استعمال کرنا چاہتے ہیں ، منصوبے کا مقصد پرتشدد کے بجائے اسلامی شدت پسند گروپس پر توجہ ہوگی۔

ذرائع کے مطابق اس اقدام کے نتیجے میں امریکا میں دہشت گردی، بم دھماکے اور فائرنگ کرنے والے سفید فام شدت پسند گروپوں پر توجہ نہیں دی جائے۔


مزید پڑھیں: امریکی صدر کے تارکین وطن اور 7 مسلم ممالک کے داخلے پر پابندی کے حکم نامہ پر دستخط


یاد رہے چند روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نئے ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کرکے امریکا میں تارکین وطن کے داخلے کے پروگرام کو معطل کرتے ہوئے 7 مسلمان ممالک کے شہریوں کے امریکا میں داخلے پر بھی پابندی عائد کردی تھی۔

آرڈر کے مطابق مسلمان ممالک ایران، عراق، لیبیا، صومالیہ، سوڈان، شام اور یمن کے شہریوں کو 90 دن تک امریکا کے ویزے جاری نہیں کیے جائیں گے جبکہ شامی مہاجرین کے امریکا میں داخلے پر تاحکم ثانی پابندی عائد کردی گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top