The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں اب امیگریشن کیلئے کینیڈا کی طرح پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرایاجائے گا

واشنگٹن : امریکامیں امیگریشن کیلئے کینیڈا کی طرح پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرانے کی تیاری کرلی گئی ،امریکی صدر کا کہنا ہے اب میرٹ اورپیشہ وارانہ مہارت کی بنیادپرامیگریشن دی جائےگی ،اگر ڈیموکریٹس نے مخالفت کی توآئندہ سال ریپبلکن ایوان سے بل منظور کرالیں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مجوزہ امیگریشن اصلاحات پیش کردیں، جس کے تحت امریکامیں اب امیگریشن کیلئے کینیڈا کی طرح پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرایاجائے گا۔

امریکی صدر ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا اب میرٹ اورپیشہ وارانہ مہارت کی بنیادپرامریکا میں امیگریشن دی جائے گی ، اگرڈیموکریٹس نےمخالفت کی توآئندہ سال ریپبلکن ایوان سےبل منظورکرالیں گے۔

ٹرمپ کا کہنا تھا اس منصوبےکےتحت گرین کارڈز کی تعدادگزشتہ سالوں کے برابر ہی رکھی جائے گی ، نیا امیگریشن سسٹم دنیا میں ہمیں قابل فخر بنائےگا۔

دوسری جانب ڈیموکریٹس نےصدرٹرمپ کےمجوزہ امیگریشن اصلاحات کو مسترد کردیا ہے ، ایوان نمائندگان کی ڈیموکریٹ اسپیکرنینسی پلوسی نے ویڈیو بیان میں بھی سخت تنقید کی۔

مزید پڑھیں : امیگریشن پالیسی پر اختلافات، امریکی وزیرداخلہ مستعفی ہوگئیں

نینسی پلوسی نے کہا ٹرمپ کی امیگریشن پالیسی میرٹ پرنہیں بلکہ اپنی ذاتی پسند ہے، کیا خاندانوں کو ایک دوسرے سے جدا کرنامیرٹ ہے؟۔ وائٹ ہاؤس نے بدترین اور ناکام امیگریشن منصوبوں کونیاچہرہ دیا ہے۔

یاد رہے گذشتہ ماہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی امیگریشن پالیسی پر اختلافات کے باعث ملکی وزیرداخلہ کرسجن نیلسن مستعفی ہوگئیں تھیں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دوٹوک موقف اختیار کیا ہے کہ امریکا مکمل طور پر بھر چکا ہے اور اب غیرقانونی تارکین وطن اور پناہ گزینوں کے رہنے کے لیے کوئی جگہ باقی نہیں بچی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں