The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کا سوشل میڈیا ویب سائٹس کیخلاف بڑا اعلان

سابق امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے سوشل میڈیا ویب سائٹس کے خلاف قانونی جنگ کا آغاز کر دیا ‏ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈونلڈٹرمپ نے فیس بک، ٹویٹر اور گوگل کے خلاف قانونی ‏چارہ جوئی کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اکاؤنٹس معطلی پر وہ ان سوشل ایپس کے خلاف مقدمہ ‏کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ وہ فیس بک کے سی ای او مارک زکربرگ اور ٹوئٹر کے سی ای او جیک ڈورسی ‏کے خلاف عدالت جائیں گے۔

معروف سوشل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارمز فیس بک اور انسٹاگرام کی انتظامیہ نے اشتعال انگیز ‏پوسٹوں اور پارلیمنٹ حملے کے تناظر میں سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اکاؤنٹس دو سال ‏کےلیے معطل کردئیے تھے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس نے اکاؤنٹس کی دو سالہ معطلی پر ٹرمپ نے بانی فیس بک مارک ‏زکر برگ پر شدید اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ صدر منتخب ہونے کی صورت میں بانی ‏فیس بک کو وائٹ ہاؤس کھانے پر مدعو نہیں کروں گا۔
فیس بک اعلامیے میں بتایا گیا تھا کہ ’امریکا کے سابق صدر کا اکاؤنٹ جنوری میں قواعد و ضوابط ‏کی خلاف ورزی پر عارضی بند کیا گیا تھا مگر اب جائزہ لینے کے بعد دو سال کی پابندی عائد کرنے ‏کا فیصلہ کیا ہے‘۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ’ٹرمپ کے فیس بک پر غیر ضروری اور متشدد بیانات کی وجہ سے ‏کیپٹل ہل میں افسوسناک واقعہ پیش آیا‘۔

فیس بک کے نائب صدر نے کہا کہ ’ٹرمپ پر عائد ہونے والی پابندی ختم کرنے سے نقصِ امن کو ‏خطرہ ہے، ماہرین نے جائزہ لینے کے بعد اکاؤنٹ معطل رکھنے کی سفارش کی، جس پر کمپنی نے ‏عمل کیا ہے‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں