گھروں میں بیٹھنے سے نظام نہیں بدلتا، مظلوموں کو اتحاد کرنا ہوگا، طاہرالقادری -
The news is by your side.

Advertisement

گھروں میں بیٹھنے سے نظام نہیں بدلتا، مظلوموں کو اتحاد کرنا ہوگا، طاہرالقادری

لاہور: پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ علامہ طاہر القادری نے کہا ہے کہ تحریک قصاص صرف سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحریک نہیں بلکہ یہ پاکستان کی خوشحالی اور سالمیت کی تحریک ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجاب کے 25 شہروں میں پاکستان عوامی تحریک کے دھرنوں سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کیا، علامہ ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ ’’آج ملک میں ظالموں کی حکمرانی ہے اور وہ اپنے اتحاد سے مظلوم کو دبا رہے ہیں، اگر مظلوم عوام ظالموں سے نجات چاہتے ہیں تو اتحاد کر کے ان حکمرانوں کو للکاریں اور اپنا حصہ لیں‘‘۔

انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’پنجاب کے ہر گھر سے بچے اغواء ہورہے ہیں ملک میں بے روزگاری ہے،پڑھے لکھے نوجوان ڈگریاں لے کر سڑکوں پر گھوم رہے ہیں اور حکمرانوں کے بچے قوم کے پیسوں سے بیرونِ ملک مزے کررہے ہیں‘‘۔

پڑھیں: علامہ طاہرالقادری نے آج سے قصاص تحریک کا اعلان کردیا

علامہ طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ ’’تحریک قصاص صرف سانحہ ماڈل ٹاؤن کے شہداء کا قصاص لینے کے لیے نہیں بلکہ یہ اس تحریک کا پہلا ایجنڈا ہے، ہم اس تحریک کے ذریعے ملک میں حقیقی جمہوریت قائم کریں گے۔ ماڈل ٹاؤن کیس انصاف کی چابی ہے، اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مجرموں کو سزا مل گئی تو آئندہ بھی قوم کو انصاف مل سکے گا‘‘۔

سربراہ عوامی تحریک نے کہا کہ ہم پاکستان کے استحصالی نظام کو بدلنا چاہتے ہیں جس کے لیے پوری قوم کو  طاقت ور حکمران طبقے کے آگے کھڑا ہونا ہوگا، اگر عوام دھرنوں اور مظاہروں سے کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں تو انہیں ظالم کے خلاف اتحاد کرنا پڑے گا، گھروں میں بیٹھنے سے ظالموں سے نجات ممکن نہیں اور اگر ہم نے اقدامات نہیں کیے تو پھر ہمارے بچے اغواء ہوتے رہیں گے۔

طاہرالقادری نے اپنے کارکنان کے سامنے سوال رکھتے ہوئے پوچھا کہ کیا قائد اعظم نے یہ ملک صرف طاقت ور اور کرپٹ طبقے کے لیے بنایا تھا؟، ایوان بالا میں پاک فوج کے خلاف غلط زبان استعمال کی جاتی ہے وہ اب جمہوری ادارہ نہیں رہا۔

انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ اگر لوڈشیڈنگ سے نجات ، میرٹ کا نظام اور آئین کی بالادستی چاہتے ہیں ہو تو میرے کارکنان کے ساتھ مل کر اس تحریک کا حصہ بنیں۔

پاناما لیکس کے حوالے علامہ طاہرالقادری نے کہا کہ تین ماہ گزر جانے کے باوجود ابھی تک ٹی او آرز کا مسئلہ حل نہیں کیا گیا اور نہ ہی حکمراں اس مسئلے کے لیے سنجیدہ ہیں۔

اس موقع پر ڈاکٹر طاہر القادری نے تحریک قصاص کے سلسلے میں 25 اگست کو ملتان 27 کو گوجرانوالہ ،29 اگست کو بلوچستان کے مختلف علاقوں کے بعد راولپنڈی میں بھی دھرنے دینے کا اعلان کیا۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں