کنٹرول لائن پر کشیدگی اور کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا،ترک صدر -
The news is by your side.

Advertisement

کنٹرول لائن پر کشیدگی اور کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا،ترک صدر

اسلام آباد : ترک صدر رجب طیب اردگان نے کہا کہ کنٹرول لائن پر کشیدگی اور کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا  جبکہ وزیراعظم پاکستان نواز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان ترک عوام کا دورا گھر ہے، ترک عوام نے جہموریت پر حملہ ناکام بنایا ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف اور ترک صدر کی مشترکہ کانفرنس ہوئی ، مشترکہ کانفرنس میں ترک صدر نے کہا کہ پاکستان کے موقف کو ترکی کبھی فراموش نہیں کر سکتا، پاکستان نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا ہے، نیوکلیئر سپلائی گروپ کیلئے ترکی کی حمایت انتہائی ضروری ہے، پاکستان اور ترکی کے درمیان دیرینہ تعلقات ہے۔

ایل او سی اور کشمیر کے حوالے سے ترک صدر نے کہا کہ کنٹرول لائن پر کشیدگی اور کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ، پاکستان اور بھارت مزاکرات سے مسئلہ کشمیر کا حل نکال سکتے ہیں۔

ترک صدر نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیروں کی خوہشات کے مطابق حل ہونا چاہیئے، ایل او سی پر کشیدگی اور جانی نقصان کو مانیٹرر کررہے ہیں، مسئلہ کشمیر کا فوری اور بامعنی حل چاہتے ہیں۔

رجب طیب اردگان کا کہنا تھا کہ سیاسی، عسکری، تجارتی، ثقافتی اور معاشی تعلقات کو مزیدوسعت دینے کاعزم رکھتےہیں، ترکی پاکستان کی توانائی کی ضروریات پوری کرنے کے لیے مکمل تعاون کرےگا۔

انھوں نے کہا کہ ترکی میں بغاوت کے بعد شریف برادران نے فون کرکے حمایت کی، ہم پاکستان اور یہاں کے عوام کا اخلاص کبھی بھول نہیں سکتے۔

ترک صدر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نوازشریف سے مفید مذاکرات ہوئے، ملاقاتوں میں علاقائی، عالمی اور کشمیر کے معاملے پربات چیت ہوئی ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان 70ویں سفارتی سالگرہ کا ہے، پاکستان میں ترک مخالف گروپ کو پناہ نہیں ملنی چاہئے۔

پاکستان ترک عوام کا دوسرا گھر ہے، وزیراعظم

وزیراعظم پاکستان نواز شریف نے کہا کہ ترک صدر اور وفد کو پاکستان آمد پر خوش آمدید کہتے ہیں، پاکستان ترک عوام کا دوسرا گھر ہے، ترک عوام نے جہموریت پر حملہ ناکام بنایا ۔

pm

وزیر اعظم نے کہا کہ دونوں ممالک کے تعلقات باہمی اعتماد اور محبت ہر مبنی ہے، ترکی میں‌ بغاوت کی کوشش پر پاکستان کو دھچکا لگا، ترک عوام نے بہادری اور جرات سے بغاوت کی کوشش کو ناکام بنایا۔

نواز شریف نے کہا کہ ترک عوام نے جہموریت کی سر بلندی کیلئے بنی تاریخ رقم کی، پاکستانی قوم منتخب ترک حکومت کو ہٹانے کی مذمت کرتی ہے، ترک صدر کی قیادت میں ترکی ترقی کی منازل طے کر رہا ہے، ترک صدر سے وسیع البنیاد پر بات چیت ہوئی۔

وزیر اعظم نواز شریف نے نیوکلیئر سپلائرز گروپ کی رکنیت کے حوالے سے پاکستان کی حمایت پر ترکی کا شکریہ بھی ادا کیا اور کہا کہ اس سے پاکستان کی پوزیشن مستحکم ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں