The news is by your side.

Advertisement

قطر سعودیہ کشیدگی، ترک صدر اردگان مشرق وسطی کا دورہ کریں گے

انقرہ : سعودی عرب سمیت دیگر چھ عرب ممالک کی جانب سے قطر پر پابندیوں کے بعد خلیجی ممالک میں پیدا ہونے والی کشیدگی کو کم کرنے کے لئے ترک صدر طیب اردگان مشرق وسطیٰ کا 2 روزہ دورہ کریں گے۔

اس بات کا اعلان ترکی کے صدارتی دفتر کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ ترک صدر طیب اردگان 23 جولائی سے خلیجی ممالک کا 2 روزہ دورہ کریں گے جہاں وہ عرب ممالک کے سربراہان سے ملاقات کریں گے اور قطر معاملے پر اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کریں گے۔

صدارتی بیان میں کہا گیا ہے کہ قطر اور دیگر خلیجی ممالک کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی پر ترک صدر تشویش مین مبتلا ہیں اور اس تصفیے کا پر امن حل چاہتے ہیں تاکہ مسلم ریاستوں مین اتحاد و اتفاق کی فضاء قائم ہو سکے۔


سعودی عرب سمیت 7 عرب ممالک نےقطرسےسفارتی تعلقات منقطع کردیے


واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی سعودیہ آمد اور چند ممالک کے خلاف سخت کارروائی کی واضح نشاندہی کے بعد جون کے مہینے سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات اور مصر سمیت بعض خلیجی ممالک نے دہشت گرد تنظیموں کی مالی اعانت کرنے کے الزام میں قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات کو منقطع کرتے ہوئے اس پر پابندیاں عائد کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

دوسری جانب قطر کے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ سعودی عرب سمیت دیگر خلیجی ممالک کی جانب سے سفارتی تعلق کو منقطع کرنا اور پابندیاں کا نفاذ غیر متوقع اور عجلت میں کیا گیا فیصلہ ہے تاہم اب بھی عرب ممالک کو مزاکرات کے دروازے کھلے رکھنے چاہیے تھے اگر پابندیاں نہ ہٹیں تو بات چیت کیسے ہو گی ؟

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں