ترکی میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان تبدیل -
The news is by your side.

Advertisement

ترکی میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان تبدیل

انقرہ: ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کے ایک سال بعد حکومت نے تینوں مسلح افواج کے سربراہان کو تبدیل کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق انقرہ میں ترک وزیراعظم بن علی یلدرم نے سپریم ملٹری کونسل کے اجلاس کی صدارت کی جس میں ترکی کی تینوں مسلح افواج کے سربراہان کو تبدیل کرنے سے متعلق فیصلہ کیا گیا۔

ترک میڈیا کے مطابق اجلاس میں فیصلہ گیا کہ ترک بری فوج کے کمانڈر جنرل صالح ذکی، بحریہ کے سربراہ ایڈمرل بولنت بوستان اوغلو اور فضائیہ کے سربراہ جنرل عابدین اونل کو عہدوں سے ہٹا دیا جائے۔

جنرل یاسر گولر کو آرمی چیف، عدنان ازبل کو بحریہ اور جنرل حسن کوچوکا کیوز کوایئرفورس کا کمانڈر مقررکیا جائے۔

یاد رہے کہ سپریم ملٹری کونسل کا اجلاس سال میں ایک بار ہوتا ہے تاہم 15 جولائی 2016 کو ترکی میں فوجی بغاوت کی ناکام کوشش کے بعد سے اب تک سپریم ملٹری کونسل کے تین اجلاس ہوچکے ہیں۔


ترکی میں بغاوت کی کوشش عوام نے ناکام بنادی، 250 سے زائد افراد ہلاک


واضح رہے کہ گزشتہ سال جولائی میں ترکی میں حکومت کا تختہ الٹنے کی ناکام کوشش کے دوران 265 افراد ہلاک ہوئےتھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں