site
stats
عالمی خبریں

یورپی یونین کے ساتھ معاہدے کے بعد ترکی کی پہلی کارروائی

استنبول: ترکی اور یورپی یونین کے مابین پناہ گزینوں کو یورپ جانے سے روکنے کا معاہدہ طے ہوتے ہی ترک حکام نے یونان جانے کی کوشش کرنے والے تیرہ سو مہاجرین اور تین انسانی اسمگلرز کو گرفتار کرلیا.

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق تارکین وطن کشتیوں کے ذریعے یونان جانے کی کوشش کر رہے تھے، چھاپوں کے دوران مختلف علاقوں سے تیرہ سو کے قریب تارکین وطن کے علاوہ انسانوں کی اسمگلنگ میں ملوث تین افراد کو بھی گرفتاراور متعدد کشتیوں کو قبضے میں لے لیا گیا۔

گرفتارافراد کی اکثریت کا تعلق شام، عراق، ایران اور افغانستان سے ہے۔

حالیہ مہینوں میں ترکی کی جانب سے تارکین وطن کو یورپ جانے سے روکنے کے لیے اب تک کی جانے والی یہ سب سے بڑی کارروائی ہے، گرفتار پناہ گزینوں کو ضروری کارروائی کے بعد آبائی ملکوں کی جانب بھیج دیا جائے گا۔

واضح رہےکہ اتوار کو ترکی اور یورپی یونین کے مابین ہونے والے معاہدے کی رو سے مہاجرین کو یورپ کے سفر سے روکنے کے عوض ترکی کو تین ارب یورو اور سیاسی مراعات حاصل ہونگی.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top