site
stats
عالمی خبریں

قطر اور خلیجی ممالک میں کشیدگی، ترکی نے قطر کی حمایت کردی

انقرہ : عرب ممالک کے قطر سے قطع تعلق ہونے کے بعد ترکی نے قطر کی حمایت کردی جبکہ سعودی وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ قطر اپنی پالیسیاں تبدیل کرے اور دہشتگرد گروپوں کی پشت پناہی ختم کرے۔

عالمی برادری نے قطر کے سفارتی بحران کے حل کیلئے کوششیں تیز کردیں، ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے سعودی عرب اور بعض عرب ممالک کی طرف سے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منطقع کرنے پر قطر کے بادشاہ تمیم بن حمد آل ثانی کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے قطر کے ساتھ ہمدردی اور اس کی حمایت کا اعلان کیا۔

ترک صدر طیب اردگان کا کہنا ہے کہ ترکی قطر کو تنہا نہیں چھوڑے گا، عرب ممالک نے قطر سے تعلقات منقطع کرکے بڑی غلطی کی ہے، کسی کو تنہا کرنے اور پابندیاں لگانے سے بحران حل نہیں ہوگا۔


مزید پڑھیں : قطر تنازع میں ثالثی، امیر کویت کی سعودی فرمانرواشاہ سلمان سے ملاقات


تنازعے کے حل کیلئے متحرک امیر کویت نے سعودی شاہ سے ملاقات کی اور مسئلے کوحل کرنے پرزور دیا ۔

دوسری جانب فرانس میں موجودسعودی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ قطر اپنی پالیسیاں تبدیل کرے اور دہشتگرد گروپوں کی پشت پناہی ختم کرے جبکہ روس اور چین سمیت مختلف ممالک نے بحران کو حل کرنے کیلئے مذاکرات پر زوردیا۔


سعودی عرب سمیت 7 عرب ممالک نےقطرسےسفارتی تعلقات منقطع کردیے


واضح رہے کہ قطر کے ساتھ سعودی عرب سمیت 7 عرب ممالک نے سفارتی تعلقات ختم کردیئے تھے اور قطر پر دہشت گردوں کی حمایت کا الزام عائد کرتے ہوئے قطر پر اپنی زمینی، فضائی اور سمندری سرحدوں کو بند کردیا تھا۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top