site
stats
پاکستان

وزیر دفاع خواجہ آصف کی ترک اور جرمن سفیروں سے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں

اسلام آباد: وزیردفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ پاک ترک اعلی سطح دفاعی گروپ کا اجلاس اکتوبر ميں ہوگا، پاکستان،ترکی اورقطرسہہ فریقی فورم کی تشکیل اہم ہے۔

ترجمان وزارت دفاع کے مطابق وزیردفاع خواجہ محمد آصف نے ترک اور جرمن سفراء سے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کیں، ترک سفیرمصطفی بابر گرگن سے ملاقات میں انقرہ اور استنبول میں دہشتگردی کی مذمت اور قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا جبکہ فتح جمہوریت اورفقری اسحق کی نئے ترک وزیردفاع مقرر ہونے پرمبارکباد دی۔

وزیر دفاع نے کہا کہ ترک صدررجب طیب اردگان نے ترکی کو جموری استحکام دیا، پاکستان،ترکی اورقطر کے مابین سہہ فریقی فورم کی تشکیل ٹیکنالوجی و آلات کی منتقلی اور تربیتی اُمور کے لیے خوش آئند ہے، ترکی افغان استحکام کے لیے کلیدی اُمید ہے، اعلی سطح فوجی مذاکراتی گروپ کا آئندہ اجلاس اکتوبرميں ہوگا۔

Khawaja-Asif1

ترکی کی جانب سے بحریہ کے لیے تیل بردار جہاز کی تیاری اہم ہے اور اِس موقع پر ترکی کو سپر مشاق طیاروں کی فراہمی کا عندیہ دیا اور ترکی سے ٹی تھرٹی سیون طیاروں کے حصول کی خواہش کا اظہار کیا جبکہ ترکی کو دفاعی نمائش آئیڈیاز دوہزار سولہ میں شرکت کی دعوت دی۔

Khawaja-Asif2

دوسری جانب جرمن سفیراینا لیپول نے وزارت دفاع میں وزیر دفاع خواجہ آصف سے ملاقات کی، اِس موقع پر وزیر دفاع نے جرمنی اور استنبول میں دہشتگردی کے واقعات میں جرمن شہریوں کی ہلاکت پردلی افسوس کا اظہارکیا اورکہا کہ دہشتگرد انسانیت کے دشمن ہیں اور دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے دنیا کو متحد ہونا ہوگا۔

اُنہوں نے پاک، جرمن تعلقات میں مثبت پیشرفت کو خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ دفاع سمیت تمام شعبوں میں روابط کو تیزی سے فروغ دینا چاہتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top