ترک قوم امریکا کے آگے ہزگز نہیں جھکائیں گے، طیب اردوگان tayyip-erdogan
The news is by your side.

Advertisement

ترک قوم امریکا کے آگے ہزگز نہیں جھکیں گے، طیب اردوگان

انقرہ : ترکی کے صدر طیب اردوگان نے امریکی پابندیوں پر رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ جو لوگ ہمیں معاشی و اقتصادی پابندیوں کی دھمکیاں دے رہے ہیں، ترک عوام ان کا مقابلہ کرنا جانتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردوگان نے اپنی سیاسی جماعت کے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’ترک حکومت اور عوام امریکا کے آگے ہرگز سر نہیں جھکائیں گے‘۔

ترک صدر طیب اردوگان کا کہنا تھا کہ ’ہم ان کے آگے کیوں جھکیں جو خود کو اسٹریٹیجک پارٹنر کے طور پر پیش کرتا ہے لیکن بیک وقت ترکی کو اسٹریٹیجک ہدف بنانے کی کوشش کرتا ہے‘۔

طیب اردوگان کا کہنا تھا کہ ’امریکا ہمیں معاشی اور اقتصادی پابندیوں، غیر ملکی کرنسی میں تبادلہ اور شرح سود میں اضافے کی دھمکیاں دے رہا ہے، لیکن وہ یہ نہیں جانتے کہ ہم ان کے فریب سے واقف ہیں جس کا مقابلہ باخوبی کرسکتے ہیں‘۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ طیب اردوگان کی سیاسی جماعت کے انتخابات کے دوران جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی (اے کے پی) کے کارکنان نے اردوگان کو ایک مرتبہ پھر پارٹی کا سربراہ منتخب کیا۔

یاد رہے کہ چند روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ ترکی سے امریکا میں دھاتوں اور دھاتی مصنوعات کی درآمدات پر عائد کردہ محصولات کو دوگنا کر رہے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کی جانب سے ترک مخالف بیان کے بعد ترک کی کرنسی لیرا بری طرح متاثر ہوئی ہے، جس کی قدر میں ریکاڑ کمی دیکھنے میں آئی ہے۔

طیب اردوگان نے امریکی پابندیوں پر رد عمل دیتے ہوئے حکومتی اراکین کو امریکی وزیر داخلہ اور وزیر انصاف کے ترکی میں موجود اثاثے منجمد کرنے کے احکامات جاری کردیئے۔

خیال رہے کہ امریکی پادری اینڈریو براؤنسن کی گرفتاری میں اہم کردار ادا کرنے والے ترک وزیر قانون و انصاف عبدالحمید گل اور وزیر داخلہ سلیمان سویلو پر امریکا نے پابندیاں عائد کردی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں