طیب اردوگان نے آئی فون سمیت دیگر امریکی مصنوعات پر پابندی لگادی turkish-president
The news is by your side.

Advertisement

طیب اردوگان نے آئی فونز سمیت دیگر امریکی مصنوعات پر پابندی لگادی

انقرہ : ترک صدر طیب اردوگان نے امریکی آئی فونز اور الیکرانکس اشیاء سمیت دیگر امریکی مصنوعات پر پابندی لگانے اور ترکی میں سرمایہ کاری کرنے والی کمپنیوں کو اضافی مراعات دنیے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی حکومت کی جانب سے ترکی پر عائد کی جانے والی اقتصادی پابندیوں کے جواب میں ترک صدر طیب اردوگان نے ان تمام مصنوعات پر پابندی لگانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’امریکی اشیاء پر پابندی عائد کرنے سے ترکی کو کوئی نقصان نہیں ہوگا‘۔

ترکی کے صدر رجب طیب اردوگان نے امریکا کی تیار کردہ تمام الیکڑانکس مصنوعات سمیت ان تمام اشیاء پر پابندی عائد کرنے کا کہا ہے کہ جن پر ’میڈ ان امریکا‘ تحریر ہوگا۔

یورو نیوز کے مطابق رجب طیب اردوگان کا کہنا تھا کہ دنیا میں تمام چیزوں کا متبادل موجود ہے، امریکا یہ نہ بھولے کہ مارکیٹ میں آئی فون کے ساتھ ساتھ سام سنگ بھی موجود ہے، اب ہم امریکی اشیاء کا بائیکاٹ کرکے دیگر مملکتوں کی اشیاء استعمال کریں گے۔

ترک صدر کی جانب سے اعلان کی گیا کہ جو کمپنیاں ترکی میں سرمایہ کاری کریں گی ترک حکومت انہیں اضافی مراعات فراہم کرے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم اپنی عوام کے ساتھ ڈالر کے خلاف کھڑے ہوں گے اور اپنی کرنسی کو مضبوط کریں گے۔

طیب اردوگان کا مزید کہنا تھا کہ لیرا کی قدر میں اضافے اور بحالی کے لیے روس سمیت 4 ملکوں سے مقامی کرنسی میں تجارت کی جائے گی اور ساتھ ساتھ ملکی بقاء کی خاطر ترک شہریوں کو بھی امریکی مصنوعات کا بائیکاٹ کرنا ہوگا تاکہ امریکا کا غرور ٹوٹ جائے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل ترک صدر طیب اردوگان نے اپنی جماعت کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’ترکی پر اقتصادی میزائل برسائے جارہے ہیں اور ملکی کرنسی کی قدر میں کمی واقع ہونا ان ہی میزائلوں میں سے ایک ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’ترکی اقتصادی طور پر ایک مضبوط ریاست ہے جو نہ کسی بحران سے دوچار ہے اور نہ ہی ملک کا دیوالیہ ہورہا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی پادری اینڈریو براؤنسن کی گرفتاری میں اہم کردار ادا کرنے والے ترک وزیر قانون و انصاف عبدالحمید گل اور وزیر داخلہ سلیمان سویلو پر امریکا نے پابندیاں عائد کردی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں